’اگلے سال شیڈول انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ کیلئے تیاریاں شروع کر دی ہیں‘

’اگلے سال شیڈول انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ کیلئے تیاریاں شروع کر دی ہیں‘
’اگلے سال شیڈول انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ کیلئے تیاریاں شروع کر دی ہیں‘
سورس:   Twitter

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان انڈر19 کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اعجاز احمد نے کہا ہے کہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) انڈر 19 کرکٹ ورلڈ کپ میں ابھی ایک سال باقی ہے لیکن ہم نے ابھی سے تیاریوں کا آغاز کر دیا گیا ہے اور یقین ہے کہ ایک سال میں مضبوط ٹیم بنانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان انڈر 19 کا سکلز ڈویلپمنٹ کیمپ ان دنوں لاہور میں جاری ہے اور نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر لاہور میں کھلاڑیوں کے سکل ورک پر کام کیا جا رہا ہے، 10 روز سکلز اور تکنیک پر کام کرنے کے بعد اب کیمپ میں شامل کھلاڑیوں نے آپس میں میچز کھیلنے کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔

 پاکستان انڈر 19 کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اعجاز احمد کا کہنا ہے کہ نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر میں نوجوان کرکٹرز کی مہارت پر کام کرنے کے بعد اب قذافی سٹیڈیم میں میچز کھیلنے کا سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے کیونکہ 7 روز کی پریکٹس اور ایک میچ برابر ہوتے ہیں۔ کھلاڑیوں کی تکنیکی صلاحیتوں اور مہارت پر توجہ دی جا رہی ہے، 40 روز کے کیمپ کے دوران میچز پر فوکس کیا جا رہا ہے، میچز میں نظر آنے والی غلطیوں پر کام کیا جائے گا۔

اعجاز احمد نے کہا کہ اگلے برس ویسٹ انڈیز میں ہونے والے ورلڈکپ میں ابھی ایک برس ہے اور ہمارے نوجوان کرکٹرز میں بہت پوٹینشل ہے امید ہے کہ ایک سال میں مضبوط کمبی نیشن بنانے میں کامیاب ہوں گے، تین سے چار کھلاڑی ایسے ہیں جو گزشتہ ورلڈ کپ بھی کھیلے ہیں، ابھی ان کے پاس نیشنل ون ڈے ٹورنامنٹ بھی کھیلنے کا موقع ہے اس لئے انہیں اچھی تیاری مل جائے گی۔

جونیئر کوچ نے کہا کہ ویسٹ انڈیز کی کنڈیشنز میں سپن باﺅلرز کار آمد ثابت ہو تے ہیں اس لئے سپنرز کے ایک گروپ پر کام کیا جا رہا ہے، نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر میں کھلاڑیوں کو ثقلین مشتاق اور مشتاق احمد جیسے سپنرز کی خدمات حاصل ہیں، انہیں ان سے بہت کچھ سیکھنے کا موقع مل رہا ہے، بیٹنگ میں محمد یوسف بڑی مدد کر رہے ہیں، انڈر19 ٹیم کی اپنی مینجمنٹ بھی ہے اس لئے میں سمجھتا ہوں کہ ٹیم مضبوط تیار ہوگی۔

 سابق ٹیسٹ کرکٹر اعجاز احمد نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) سے درخواست کی ہے کہ انڈر 19 ٹیم کے جو ٹورز بھی شیڈول کئے جائیں ان میں تھری ڈے کرکٹ کو بھی شامل کیا جائے تاکہ نوجوانوں میں لمبی کرکٹ کھیلنے کا ٹمپرا منٹ پیدا ہو کیونکہ دنیا بھر میں ایج گروپ کرکٹ میں تھری ڈے کرکٹ کو اہمیت دی جا رہی ہے۔

مزید :

کھیل -