دائرہ دین پناہ،ناقص میٹریل سے نکاسی آب کا منصوبہ فلاپ

دائرہ دین پناہ،ناقص میٹریل سے نکاسی آب کا منصوبہ فلاپ

  

دائرہ دین پناہ (نامہ نگار)  دائرہ دین پناہ کی نکاسی آب کیلئے محکمہ پبلک ہیلتھ کے تعاون سے 3 کروڑ 64 لاکھ کی لاگت سے تعمیر کیے جانیوالا اہم ترین منصوبہ ناقص ترین میڑیل کے استعمال کے باعث چند سالوں میں ہی فلاپ ہوگیا۔ناقص ترین میڑیل کے استعمال کے باعث عمارت مین نہ صرف داڑیں پڑ گئیں بلکہ کسی بھی وقت منہدم ہونے کا بھی خطرہ ہے۔جہاں پر قریبی بستی کے مکیں بچوں اور دیگر لوگوں کی آمدورفت بھی رہتی ہے۔پانی کھینچنے والی دو بڑی موٹریں (بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

غائب ہوچکی ہیں اور بڑا کنواں بھی بدحالی کا شکار ہے۔شہر بھر کی نکاسء آب کا اہم منصوبہ ناقص میڑیل کے باعث فلاپ ہونے سے شہریوں کیلیے درد سر بن گیا ہے۔ نکاسء آب نہ ہونے سے بارش کے دنوں میں پانی نہ صرف گھروں میں داخل ہوجاتا ہے بلکہ شہر کے وسط سے گذرنے والا گندہ کھال بھی شہریوں کو دوہری اذیت میں مبتلا کردیتا ہے۔جس سے شہری بارش کے دنوں میں گھروں کے اندر محصور ہوجاتے ہیں۔شہریوں محمد ناصر،ارشاد حسین،محمد رؤف،محمد عامر،محمد نواز،محمد عبداللہ وغیرہ نے محکمہ پبلک ہیلتھ اور کاشف کنڑیکشن کمپنی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کمشنر ڈیرہ غازی خان اور ڈی سی مظفر گڑھ سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

فلاپ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -