پی ایس ڈی ایف،سب سے بڑے سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ کے دس سال مکمل

پی ایس ڈی ایف،سب سے بڑے سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ کے دس سال مکمل

  

  ملتان (پ ر)  PSDFنے ملک کے سب سے بڑے سکلز ڈویلپمنٹ (بقیہ نمبر54صفحہ7پر)

فنڈ کے طور پر اپنے دس سال مکمل ہونے کی کامیابی منائی۔ ایک دہائی کے دورانPSDF  نے پنجاب کے تمام 36 اضلاع میں 250 سے زائدٹریڈز میں 500,000 سے زیادہ مردوں اور عورتوں کو FCDO (فارن کامن ویلتھ اینڈ ڈویلپمنٹ آفس)، ورلڈ بینک اور حکومت پنجاب کی جانب سے تربیت فراہم کی ہے۔ PSDFنے 2010 میں صرف چار ٹریننگ سروس پرووائیڈرز (TSPs) کے ساتھ اپنی ٹریننگز کو انجام دینے کے لیے کام شروع کیا اور تب سے اب تک 600 سے زیادہ TSPs کا نیٹ ورک قائم کر چکا ہے۔ PSDF کے تمام ٹرینیز میں سے 43% خواتین ہیں،علاوہ ازیں مجموعی طور پر سالانہ 21 ارب روپے کا ریونیو پیدا کر رہے ہیں۔ادارے نے پاکستان کے TVET سیکٹر میں صنعت کو ما لی  اشتراک کے پروگراموں کے ذریعے ڈیزائن کرنے اور مشترکہ فنڈ سے تربیتی پروگراموں کے ذریعے ترتیب دیاجو کہ ایمپلائرزا ورورکرز کے درمیان موجود فرق کو ختم کرنے کے لیے ہے۔PSDF چھ شعبوں میں ٹریننگ کے لیے  فنڈز فراہم کرتا ہے جن میں E-tayyar, Umeed, Haryali, Uraan, Mahir اورAghaazشامل ہیں۔ ہر پروگرام خصوصی ٹریننگ کورسز پیش کرتا ہے جس میں مختلف پیشوں اور ٹریڈزپر توجہ مرکوز کی جاتی ہے تاکہ ٹریننگ حاصل کرنے والوں کی مہارتوں کو بہتر بنایاجا سکے تاکہ وہ کامیابی سے آمدنی پیدا کرنے کے مواقعوں تک رسائی حاصل کر سکیں۔  2020 میں جیسے ہی وبائی مرض آشکار ہوا تو PSDF  نے اپنے ٹریننگ ڈیلیوری ماڈل کو تیزی سے دوبارہ ترتیب دیا اورٹریننگ کا طریقہ کار کلاس روم کی تربیت سے ڈیجیٹل ٹریننگز پر منتقل کیا۔PSDF  نےCoursera (دنیا کا معروف ای لرننگ پورٹل)  اور Gnowbe کے ساتھ کامیاب شراکت داری قائم کی تاکہ سیکھنے والوں کو پیشہ ور فری لانس بننے اور اپنا کاروبار شروع کرنے کے لیے ضروری سکلز سکھانے کے لیے آن لائن کورسز پیش کیے جائیں۔PSDF نے Foodpanda، Uber، Enablers، Jazz اور Zong کے ساتھ مل کر پائلٹ ٹریننگ اور مختلف قسم کے اسکل سیٹ تیار کیے جن کی موجودہ جاب مارکیٹ میں ڈیمانڈ ہے۔PSDF نے تربیت کے معیار کی نگرانی کرنے اور سیکھنے والوں کے ذریعہ معاش پر مثبت اثر ڈالنے کی بنیاد پر پروگرام ڈیزائن کرنے کے لیے ٹیمیں وقف کر رکھی ہیں۔PSDF نے اپنے کاموں کو خودکار بنانے اور ڈیجیٹائز کرنے میں سرمایہ کاری کی ہے جو کہ ملک کی واحد ڈویلپمنٹ سیکٹر کی تنظیم ہے جو ای پروکیورمنٹ کا استعمال کرتی ہے جس میں paper-less  اور شفاف پبلک پروکیورمنٹ کا نظام ہے۔PSDF اپنے تربیت یافتہ افراد کی ڈیجیٹل تصدیق کا استعمال اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کرتا ہے کہ صرف اہل شہری ہی ٹریننگز حاصل کریں اور اس کے مینڈیٹ کے مطابق وسائل تک رسائی حاصل کریں۔روزگار کے مواقعوں کو بڑھانے کے لیے  PSDF نے اپنے بین الاقوامی جاب پلیسمنٹ پروگرام کے ذریعے پاکستان کی افرادی قوت کو بین الاقوامی ایمپلائرز سے جوڑنے پر کام کیا ہے تاکہ شہری ہنر مند ورکرزکی عالمیڈیمانڈ سے فائدہ اٹھا سکیں۔ مشرق وسطیٰ میں ہاسپٹیلٹی کے شعبے کی سرکردہ تنظیموں کے ساتھ شراکت کے ذریعے سےPSDF کے گریجوایٹس متحدہ عرب امارات، کویت اور سعودی عرب میں کام کر رہے ہیں۔اپنی ماہرانہ ٹیم کی مسلسل کوششوں کے باعثPSDF نے بطور موئثر تنظیم ترقی حاصل کی ہے   ۔PSDFکو 2019 میں کام کرنے کے لیے" Best place to work    ''کا ایوارڈ اور حال ہی میں وزیر اعلیٰ پنجاب کی  جانب سے شاندار کارکردگیپر "لیٹر آف اچیومینٹ "سے نوازا گیا ہے۔ PSDF کے انٹرپرینیورشپ کورس کے تحت ٹریننگ حاصل کرنے والے  گریجوایٹس  نے نئے کاروبار کے لیے منصوبے تیار کرنے اور اپنے اسٹارٹ اپس کے لیے مالی قرضے حاصل کرنے کی تربیت لے کر وزیر اعظم کی کامیاب جوان سکیم کے تحت HBL سے مجموعی طور پر  100 ملین روپے حاصل کیے جن کا مقصد شہریوں کو قابل توسیع کاروبار فراہم کرنا ہے۔ 

مکمل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -