جنوبی پنجاب،رواں سیزن،کپاس پیداوار میں 15فیصد اضافہ

جنوبی پنجاب،رواں سیزن،کپاس پیداوار میں 15فیصد اضافہ

  

ملتان (سپیشل رپورٹر) جنوبی پنجاب ایگریکلچرل سیکرٹریٹ کی کپاس کی بحالی بارے کی جانے والی کوشیش بار آوور ثابت ہورہی ہیں رواں کاٹن سیزن میں کپاس کی پیداوار میں 15فیصد سے زائد کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔اس ضمن میں پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن (پی سی جی اے)نے کپاس کی فیکٹریوں میں آمد کے اعدادو شمار جاری کر دیئے ہیں جسکے مطابق 15جنوری2022تک صوبہ پنجاب کی فیکٹریوں میں 38لاکھ 74ہزار(بقیہ نمبر56صفحہ7پر)

3گانٹھ کپاس آئی ہے جو گذشتہ سال کی اسی مدت میں فیکٹریوں میں آنے والی فصل33لاکھ66ہزار549گانٹھ کپاس سے 5لاکھ7ہزار454گانٹھ زائدہے۔ پنجاب میں اضافے کی شرح15.07فیصد رہی۔ صوبہ پنجاب میں 53جننگ فیکٹریاں آپریشنل ہیں او ر38لاکھ51ہزار582گانٹھ روئی تیار کی گئی ہے۔ ضلع ملتان میں 15جنوری2022تک72ہزار80گانٹھ کپاس،ضلع لودھراں میں 88ہزار203گانٹھ کپاس،ضلع خانیوال میں 2لاکھ30ہزار 18گانٹھ کپاس، ضلع مظفر گڑھ میں 1لاکھ16 ہزار220گانٹھ کپاس،ضلع ڈیرہ غازی خان میں 3لاکھ 20ہزار172گانٹھ کپاس، ضلع راجن پور میں 96ہزار510گانٹھ کپاس ضلع لیہ میں 1لاکھ91 ہزار536گانٹھ کپاس،ضلع وہاڑی میں 1لاکھ 2 ہزار 964گانٹھ کپاس، ضلع ساہیوال میں 1لاکھ57ہزار629گانٹھ کپاس، ضلع رحیم یار خان میں 6لاکھ66ہزار654گانٹھ کپاس،ضلع بہاولپور میں 5لاکھ 20ہزار579گانٹھ کپاس، ضلع بہاولنگر میں 10لاکھ98 ہزار961 گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی ہے۔مذکورہ اعداد وشمار کے مطابق جنوبی پنجاب کے اضلاع میں کپاس کی پیداوار میں گزشتہ سالوں کے مقابلے میں نمایاں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔  

رپورٹ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -