توہین عدالت کی درخواست پر سماعت،ایجوکیشن افسروں کی سرزنش

توہین عدالت کی درخواست پر سماعت،ایجوکیشن افسروں کی سرزنش

  

ملتان (خصو صی  رپورٹر) لاہور  ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج جسٹس محمد رضا قریشی نے محکمہ تعلیم کے افسران کے خلاف توہین عدالت کی در خواست کی سماعت کرتے ہوئے سخت سرزنش کی اور ان سے پوچھا کہ وہ ابھی جیل جا نا پسند کریں گے یا کل تیاری کرکے آئیں۔انہوں (بقیہ نمبر49صفحہ6پر)

نے پوچھا کہ عدالت عالیہ کے واضح احکامات پر عملدرامد پر کیوں نہیں کیا گیا۔ فاضل عدالت نے محکمہ تعلیم کے افسران سے پوچھا کہ ایک لیڈی ٹیچر کوثر پروین نے 30 سال تک سروس کی۔دوران ملازمت اس نے بی اے،بی ایڈ اور ایم اے پاس کیا۔ریٹائرمنٹ کے بعد اسے محکمہ نے این او سی دیا۔ مگر اس کے واجبات اس لئے روک لئے گئے کہ اس کی میٹرک کی سند جعلی تھی۔فاضل عدالت نے ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر خانیوال رخسانہ یاسمین کو اصالتا اور دیگر افسران سے اج جواب طلب کرلیا ہے۔اور واجبات کی ادائیگی کا حکم دیا۔پیٹیشنر کی جانب سے سید اظہرحیدر بخاری نے پیروی کی۔

سرزنش

مزید :

ملتان صفحہ آخر -