مسئلہ کشمیر کے حل تک خطے میں دائمی امن کا خواب پورا نہیں ہوسکتا: کل جماعتی حریت کانفرنس 

مسئلہ کشمیر کے حل تک خطے میں دائمی امن کا خواب پورا نہیں ہوسکتا: کل جماعتی ...

  

نئی دہلی،سرینگر(آئی این پی)بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں وکشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے غیر قانونی طور پر نظر بند نائب چیئرمین شبیر احمد شاہ نے مقبوضہ علاقے کی بگڑتی ہوئی سیاسی اور انسانی حقوق کی صورتحال پرسخت تشویش کاا ظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل نہیں کیا جاتا تب تک خطے میں دائمی امن کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکتا۔میڈیارپورٹس کے مطابق شبیر احمد شاہ نے نئی دہلی کی بدنام زمانہ تہاڑ سے اپنے ایک پیغام میں کہا کہ بھارتی حکومت کی طرف سے 5اگست 2019کے غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات کے بعد مقبوضہ علاقے میں انسانی حقوق کی صورتحال خطرنا ک حد تک بگڑ چکی ہے۔ انہوں نے بھارتی اقدامات کو اقوام متحدہ کی قرار دادوں کی کھلم کھلا خلا ف ورزی قرار دیتے ہوے کہا کہ پانچ اگست کشمیرکی تاریخ کا ایک سیاہ باب ہے جسے کشمیری کبھی بھی فراموش نہیں کریں گے۔ انہوں نے واضح کیا کہ کشمیری غاصبانہ بھارتی قبضے کے خاتمے اور حق خود ارادیت کے حصول کی جدوجہد کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ شبیر احمد شاہ نے مقبوضہ علاقے میں جاری بھارتی ریاستی دہشت گردی اور ظلم و ستم پر دکھ و افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر بھارتی حکمران یہ سمجھتے ہیں کہ وہ ماردھاڑ اور ظلم و تشدد سے ہمارے عزائم توڑ سکتے ہیں تو یہ ان کی بھول ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں نے کبھی بھی بھارتی کا غاصبانہ قبضہ تسلیم نہیں کیا ہے اور نہ وہ 5اگست 2019کے غیر جمہوری اور غیر قانونی اقدامات کو تسلیم کرتے ہیں۔

حریت کانفرنس

مزید :

صفحہ آخر -