بچوں، نوجوانوں کوکورونا ویکسین بوسٹر شاٹس کی ضرورت نہیں، ڈبلیوایچ او 

بچوں، نوجوانوں کوکورونا ویکسین بوسٹر شاٹس کی ضرورت نہیں، ڈبلیوایچ او 

  

 نیو یارک (آئی این پی)ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی چیف ڈاکٹر سومیا سوامی ناتھن نے کہا ہے کہ ابھی کوئی ثبوت نہیں جس سے پتہ چلتا ہو کہ صحت مند بچوں اور نوجوانوں کو اپنی کوویڈ 19 ویکسین کی تکمیل کیلئے بوسٹر شاٹس کی ضرورت ہے۔سوامی ناتھن کا کہنا ہے کہ سیج کی مشاورتی ایجنسی سے اس ہفتے ملاقات میں اس بات پر غور کیا جائے گا کہ کسے بوسٹر ڈوز چاہیے۔سوامی ناتھن نے ڈبلیو ایچ او کی میڈیا بریفنگ میں کہا کہ ہمارا مقصد سب سے زیادہ کمزور لوگوں کی حفاظت کرنا ہے جو شدید بیماری اور مرنے کے سب سے زیادہ خطرے میں ہیں۔ ڈبلیو ایچ او کے ہیلتھ ایمرجنسی پروگرام کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر مائیکل ریان نے کہا کہ ایجنسی نے ابھی تک یہ نہیں معلوم کیا ہے کہ آخرکار لوگوں کو کتنی بار یا کتنی خوراک کی ضرورت ہوگی۔انکا کہنا ہے کہ مجھے لگتا ہے کہ لوگوں کو وہاں سے ایک خاص خوف ہے کہ یہ بوسٹر ڈوز ہر دو یا تین ماہ کی طرح ہونیوالی ہے اور ہر ایک کو جا کر بوسٹر لینا پڑے گا۔ اور مجھے نہیں لگتا کہ ہمارے پاس ابھی تک اس کا جواب ہے اگرچہ زیادہ تر صحت مند لوگوں کو صرف دو شاٹس کی ضرورت پڑسکتی ہے جبکہ عمر رسیدہ یا امیونوکمپرومائزڈ افراد کو تین یا چار بوسٹر ڈوز کی ضرورت پڑسکتی ہے۔

ڈبلیو ایچ او 

مزید :

صفحہ آخر -