بنوں،علاقہ مشران کی کوششیں بارآور،دیرینہ تنازعہ حل 

بنوں،علاقہ مشران کی کوششیں بارآور،دیرینہ تنازعہ حل 

  

بنوں (نمائندہ خصوصی)مشران کی کوششوں سے اقدام قتل کی دشمنی دوستی میں تبدیل ہوگئی نصرادین سورانی میں اصغر مشکلام،ہمایون اور نعیم کے خاندا ن جبکہ گل اختر،عامر سہیل،واجد،ولید ساجد اور نواب کے خاندانوں کے مابین اقدام قتل کی دشمنی چلی آرہی تھی اصغر فریق کی جانب سے فائرنگ کے نتیجے میں نعیم زخمی ہوئے تھے اس دشمنی کے خاتمے کیلئے گلشن پراپرٹی کے شاہ نیاز خان،حاجی نیکلات خان،شمر علی خان،نواب خان،مد آیاز خان اور صادق خان نے کوششیں کیں اور فریقین کو دشمنی ختم کرنے پر رضامند کیا بدھ کے روز گل اختر فریق کی جانب سے نعیم کے خاندان کو علاقہ کے مشران،علماء کرام اور معززین کے ہمراہ ننواتے جگہ بھیجا گیا جسمیں 12لاکھ روپے نقد اور چار دنبے پیش کئے گئے جسے جرگہ کی حاطر اصغر خان اور مشکلام خان کے خاندان نے معاف کرتے ہوئے دشمنی ختم کرنے کا اعلان کیا اور دونوں فریقین جرگہ کے سامنے ایک دورسرے بغلگیر ہوگئے اور آئندہ بھائیوں کی طرح وقت گزارنے کاعہد کیا۔اس موقع پر شاہ نیاز خان نے کہا کہ دشمنی اللہ کی جانب سے عذاب ہے علاقہ کے مشران اگراپنے اپنے علاقوں میں دشمنیوں کے خاتمے کیلئے کردار ادا کرے تو علاقے میں دشمنیاں ختم ہوں گی اور علاقہ امن کا گہوارہ بنے گا۔انہوں نے کہا کہ آج انتہائی خوشی کا مقام ہے کہ دو فریقین کے مابین صلح سے اللہ تعالیٰ خوش ہوگا اور شیطان کی کمر ٹوٹ گئی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -