سکھر،اسمگل شدہ اشیاء، ممنوعہ ادویات و دیگر سامان نذر آتش

سکھر،اسمگل شدہ اشیاء، ممنوعہ ادویات و دیگر سامان نذر آتش

  

سکھر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)سکھرمیں محکمہ کسٹم انٹلی جنس کی جانب سے لاکھوں روپے کی اسمگل شدہ اشیاء، ممنوعہ ادویات و دیگر سامان نذر آتش، تلف کی گئی اشیاء  و سامان اندرون سندھ کارروائیوں کے دوران پکڑی گئی تھیں، یڈیشنل ڈائریکٹر جمشید علی تالپور کی میڈیا سے گفتگو تفصیلات کے مطابق سکھر میں محکمہ کسٹم انٹلی جنس  کی جانب سے سکھر سمیت اندرون سندھ کے مختلف شہروں میں کارروائیوں کے دوران پکڑی گئی  ممنوعہ اور  مضرصحت اشیاء  اور اسمگل شدہ سامان جس میں 27 ہزار031 کلو گرام چھالیہ، 7133سگریٹ کے پیکٹس،20ہزار830 کلو گرام اجینو موتو5561 پیکٹس گٹکا و نسوار 4ہزار کلوگرام پان کا کتھا،920 کلو گرام شیشہ فیلور،اور 196کریم کریٹس  نذر آتش کیے گئے جس کی نگرانی مئجسٹریٹ عبداللطیف نے کی اس موقع پر ایڈیشنل ڈائریکٹر جمشید علی تالپور اور ڈپٹی ڈائریکٹر شکیل احمد لاڑک نے اس موقع پر میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے بتایاکہ یہ اشیاء  سال 2021کے دوران مختلف کارروائیوں کے دوران پکڑا گیا تھا،  جس کی مالیت 65.911 ملین روپے۔ہے ان کا کہنا تھا کہ محکمہ کسٹم انٹلی جنس اسمگلنگ کی روک تھام کے لیے زیادہ سے زیادہ اقدامات کیے جارہے ہیں دریں اثناء  ورلڈ کسٹم ڈے کے سلسلے میں ایک تقریب کا انعقاد بھی کیا گیا جس میں مختلف محکموں کے افسران کو شیلڈز دی گئیں تقریب میں رینجرز،پولیس،کسٹم،بلدیہ سمیت دیگر محکموں کے افسران،سکھر چیمبر کے رکن عامر فاروقی  سمیت تاجروں،معززین شہر اور صحافیوں نے شرکت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -