پہلی ششماہی، ملک میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 20فیصد اضافہ 

پہلی ششماہی، ملک میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 20فیصد اضافہ 

  

       اسلام آ باد (آئی این پی) رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 20 فیصد تک اضافہ دیکھا گیا ۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق رواں مالی سال 22-2021 کے ابتدائی 6 ماہ جولائی تا دسمبر کے دوران ملک میں ایک ارب 5 کروڑ ڈالر سے زائد کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری ہوئی۔ گزشتہ مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران 88 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری ہوئی تھی۔ اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں گزشتہ سال کے اسی دورانیے کے مقابلے میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کے حجم میں 20 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔ مرکزی بینک کے مطابق رواں مالی سال کی ابتدائی 6 ماہ کے دوران توانائی کے شعبے میں 36 کروڑ ڈالر سے زائد کی بیرونی براہ راست سرمایہ کاری کی گئی۔ اس کے علاوہ مالیاتی کاروبار کے شعبے میں 20 کروڑ اور مواصلات کے شعبے میں 14 کروڑ ڈالر سے زائد کی سرمایہ کاری ہوئی ہے۔ رواں مالی سال کے ابتدائی 4 ماہ میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ میں 12 فیصد کی گراوٹ دیکھی گئی تھی لیکن اس کے بعد دنیا کے چند دیگر ملکوں سے کی گئی سرمایہ کاری نے منفی اثر کو زائل کردیا۔ مرکزی بیک کے مطابق گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں میں چینی سرمایہ کاری کے حجم میں 21 فیصد کمی ہوئی ہے لیکن اب بھی براہ راست سرمایہ کاری میں چین کا حجم سب سے زیادہ ہے۔ رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران چین سے 30 کروڑ ڈالر، امریکا سے 15 کروڑ ڈالر، ہالینڈ سے 12 کروڑ جب کہ ہانگ کانگ سے 11 کروڑ ڈالر سے زائد کی براہ راست سرمایہ کاری کی گئی۔

سرمایہ کاری

مزید :

صفحہ آخر -