بائیکیا پر سفر کرنے والے مسافروں اور رائیڈرز کے لیے اہم خبر

بائیکیا پر سفر کرنے والے مسافروں اور رائیڈرز کے لیے اہم خبر
بائیکیا پر سفر کرنے والے مسافروں اور رائیڈرز کے لیے اہم خبر

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)شہریوں کو موٹر سائیکل کے ذریعے ٹرانسپورٹیشن کی سہولیات فراہم کرنے والی کمپنی بائیکیا اور اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کے مابین سروس استعمال کرنے والے کسٹمرز کی انشورنس کے حوالے سے گزشتہ ماہ معاہدہ ہوا ہے۔معاہدہ کے تحت بائیکیا کی سہولت حاصل کرنے والے شہریوں سے 5روپے انشورنس کی مد میں لئے جارہے ہیں جس کے بدلے کسی بھی حادثے کی صورت میں قیمتی جان کی ضیاع پر 4لاکھ روپے لواحقین کو دیے جائیں گے اور حادثے میں زخمی ہونے کی صورت میں 25ہزار روپے تک ہیلتھ کوریج دی جاتی ہے۔

دستاویزات کے مطابق کسی حادثے کی صورت میں مالی نقصان کا بھی ازالہ کیا جاتا ہے تاہم یہ سہولت بائیکیا کے رائڈرز کو حاصل نہیں ہے۔اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کے چیئرمین شعیب جاوید حسین کا کہنا ہے کہ بائیکیا کے ساتھ اسٹیٹ لائف کا یہ پہلا ڈیجیٹل منصوبہ ہے جس کے تحت شہریوں کو حادثات کی صورت میں لائف اور ہیلتھ کوریج دی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس منصوبے کے پہلے فیز میں صرف پسنجرز کو شامل کیا گیا ہے لیکن دوسرے فیز میں رائیڈرز کو بھی شامل کرنے پر بھی کام ہورہا ہے۔میڈیا بریفنگ میں شعیب جاوید حسین کا کہنا تھا کہ بائیکیا کے ساتھ اشتراک منافع کمانے کے لئے نہیں بلکہ کم آمدن والے طبقے تک انشورنس کی سہولیات پہنچانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسٹیٹ لائف ہیلتھ انشورنس پالیسی متعارف کرنے جارہے ہیں جس کا پریمیئم انڈسٹری ریٹ سے کم اور سہولیات بہتر ہوں گی۔اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کے ایک افسر کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ پسنجر کے لئے ایک رائیڈ کے پانچ روپے دینا آسان ہوتا ہے لیکن رائیڈر کا معاملہ مختلف ہوتا ہے اسلئے اس کے لئے مختلف پالیسی پر کام ہورہا ہے۔

مزید :

قومی -