خوف نے لاکھوں افراد کو موت کی نیند سلا دیا، اعتماد اور یقین خوف سے کہیں بہتر ہے۔ خدا کی قدرت اور دنیا میں موجود اچھائیوں سے زیادہ طاقتور چیز اور کوئی نہیں 

 خوف نے لاکھوں افراد کو موت کی نیند سلا دیا، اعتماد اور یقین خوف سے کہیں بہتر ...
 خوف نے لاکھوں افراد کو موت کی نیند سلا دیا، اعتماد اور یقین خوف سے کہیں بہتر ہے۔ خدا کی قدرت اور دنیا میں موجود اچھائیوں سے زیادہ طاقتور چیز اور کوئی نہیں 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 مصنف: ڈاکٹر جوزف مرفی
مترجم: ریاض محمود انجم
قسط:167
خوف سے مکمل نجات کیلئے ضروری اقدام پر عمل کیجیے:
1:آپکو جس عمل سے خوف محسوس ہوتا ہے، اسے کر گزریئے، خوف کے یقینی خاتمے کیلئے یہی ایک کارگر اور مفید نسخہ ہے۔ اپنے آپ سے یہ کہیے اور اس پر ثابت قدمی سے قائم رہیے: ”میں اپنے اس خوف سے نجات حاصل کرنے لگا ہوں۔“
2:ایک منفی اور غیرتعمیری خیال کی حیثیت سے خوف آپ کے ذہن میں موجود ہوتا ہے۔ اس منفی اور غیرتعمیری خیال کی بجائے مثبت اور تعمیری خیال اپنے ذہن میں نقش کیجیے۔ خوف نے لاکھوں افراد کو موت کی نیند سلا دیا۔ اعتماد، بھروسہ اور یقین، خوف سے کہیں بہتر ہے۔ خدا کی قدرت اور دنیا میں موجود اچھائیوں اور نیکیوں پر اعتماد اور یقین سے زیادہ طاقتور چیز اور کوئی نہیں ہے۔
3:خوف انسان کا سب سے بڑا دشمن ہے۔ آپ کی ناکامی، بیماری اور کمزور و ناکام انسانی تعلقات کی بنیاد صرف خوف ہے۔ محبت،پیار اور چاہت کے ذریعے خوف سے نجات حاصل کی جا سکتی ہے۔ زندگی کی اچھائیوں اور نیکیوں سے جذباتی وابستگی کا نام محبت، پیار ہے۔ ایمانداری، اخلاص، انصاف اور کامیابی کے ساتھ محبت،پیار اور چاہت کو اپنایئے۔ ہمیشہ خوشگوار حالات اور بہتری کی توقع رکھیے اور پھر آپ کو ہر حال میں خوشگوار اور بہترین حالات میسر آئیں گے۔
4:اگر آپ کے ذہن میں خوف پرمبنی خیال یا تصو رپیدا ہوتا ہے تو پھر اس کی بجائے اپنے ذہن میں عدم خوف پر مبنی مثبت خیال اور تصور پیدا کیجیے۔ مثلاً ”میں بہت خوبصورتی سے گا رہی ہوں، میں بہت مطمئن، خوش او رپرسکون ہوں، اس کا نتیجہ میرے حق میں بہت ہی بہتر ہو گا۔“
5:کمرہ امتحان میں یادداشت کھو جانے کا سبب اور بنیاد ”خوف“ ہے۔ جب اس قسم کی صورتحال درپیش ہو تو پھر مثبت سوچ کے ذریعے خود کو اکثر یوں مخاطب کیجیے: ”ہر قسم کے سوال کا جواب معلوم کرنے کیلئے میرے پاس مکمل اور بہترین حافظہ موجود ہے۔“ یا آپ تصور اور تخیل میں ایک ایسے دوست کو دیکھ سکتے ہیں جو آپ کو امتحان میں شاندار کامیابی پر آپ کو مبارکباد دے رہا ہو۔“ اس بیان کو مستقل مزاجی اور ثابت قدمی سے دہراتے رہیے، کامیابی آپ کا مقدر ہو گی۔
6:اگر آپ پانی میں جانے یا تیرنے سے گھبراتے ہیں اور خوف زدہ ہیں تو پھر تصوراتی اور تخیلاتی طور پر بخوشی اور نہایت آسانی سے تیرنے کی کوشش کریں۔ ذہنی طور پر خود کو پانی کے اندر محسوس کیجیے۔ پانی کی ٹھنڈک کو محسوس کریں اور تالاب میں تیراکی کا لطف اٹھائیں اور اس ذہنی منظر کو حقیقی منظر سمجھیں۔ جب آپ اس عمل کو اندرونی طو رپر تخیلاتی انداز میں سرانجام دیں گے تو آپ میں یہ تحریک پیدا ہو گی کہ آپ حقیقتاً بھی پانی میں تیریں اور پانی کے خوف سے نجات حاصل کریں۔یہی عمل، آپ کے ذہن کے اصول کی حیثیت رکھتا ہے۔(جاری ہے) 
نوٹ: یہ کتاب ”بُک ہوم“ نے شائع کی ہے۔ ادارے کا مصنف کی آراء سے متفق ہونا ضروری نہیں۔(جملہ حقوق محفوظ ہیں)

مزید :

ادب وثقافت -