چائے کے پیسے مانگنے کا قصور‘ مالک کیخلاف منشیات کا مقدمہ درج‘ حوالات میں بند

چائے کے پیسے مانگنے کا قصور‘ مالک کیخلاف منشیات کا مقدمہ درج‘ حوالات میں بند

لاہور(اپنے نمائندے سے) پولیس اہلکاروں سے چائے کے پیسے مانگنے پر جرم میں منشیات فروشی کے مقدمہ میں ملوث کرتے ہوئے حوالات میں بند کر دیا گیا۔ 6 روز گزر جانے کے بعد بھی ضمانت نہیں ہوسکی ہے۔ پولیس والے مزید جھوٹے مقدمات درج کرنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں اعلیٰ حکام انصاف دلوائیں۔ ان خیالات کا اظہار ضلع کچہری میں ہتھکڑیوں میں جکڑے ہوئے بھگت پورہ کے رہائشی افضل نے کیا۔ افضل نے روزنامہ پاکستان کو بتایا کہ اس کی چائے کی دکان ہے اور پان سگریٹ کا کھوکھا بھی لگا رکھا ہے جہاں پر وہ چائے فروخت کرکے اپنے ماں باپ اور گھر والوں کا خرچہ نکالتا ہے۔ گزشتہ دنوں میری دکان پر کھانے شاد باغ کی پولیس آئی جنہوں نے مجھے چائے او ر بعدازاں میں نے جب چائے کے پیسے مانگے تو پولیس اہلکاروں نے پیسے دینے کے بعد 2 روز بعد مجھ پر منشیات فروشی کا مقدمہ درج کرتے ہوئے گرفتاری ڈال اور مجھے حوالات میں بن د کر دیا۔ آج تک منشیات فروشوںکے ساتھ بھی نہیں بٹھا ہوںمگرمجھے جھوٹے مقدمہ میں ملوث کرتے ہوئے منشیات فروش بنا دیا گیا ہے۔ اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کہ وہ نوٹس لیتے ہوئے مجھے انصاف دلائیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...