معمولی رنجش پر گھر گھس کر فائرنگ ، لڑکی جاں بحق، بہن شدید زخمی

معمولی رنجش پر گھر گھس کر فائرنگ ، لڑکی جاں بحق، بہن شدید زخمی

لاہور(رپورٹ حنیف خان) معمولی تنازعہ کی رنجش پر ملزمان گھر میں گھس کر اندھا دھند فائرنگ کردی جس سے بے گناہ جواں سالہ لڑکی سنیہ ہلاک ہوگئی اور اسکی بہن شدید زخمی ہوگئی ۔پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا لیکن ملزمان سے مبینہ طور پربھاری رشوت لے کر الٹا مدعی باپ اور مقتول کے کزنوں کو لڑکی سنیہ کے قتل میں پھنسانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔پولیس مدعی کو دھمکیاں دے رہی ہے کہ تم اس قتل کا مدعہ اپنے بھتیجوں پر ڈال دو تمھیں رقم دلوا دیں گے ورنہ تمھیں بھی اپنے ہی بیٹی کے قتل میں پھنسا کر چالان کردیا جائے گا ۔بے گناہ مقتولہ کے والد نے وزیر اعلی پنجاب اور آئی جی پنجاب پولیس سے اپیل کی ہے کہ اس کیس کی تفتیش تبدیل کرکے لاہور منتقل کردی جائے اور اپنے آفس کے کسی اعلی اور ایماندار افسر سے اس کیس کی تفتیش کروائی جائے ۔یہ بات مقتول سنیہ کے والد محمد صدیق اور والدہ نے پاکستان کے دفتر میں آکر بتائی ۔انہوں نے بتایا کہ وہ نارووال کے رہائشی ہیں یہ لوگ گھر میں بیٹھے ہوئے تھے اس موقع پر عدنا ن اور سعید بھی انکے گھر میں موجود تھے کہ اچانک ملزمان وارث علی عرف مٹھو،منشاء،اکبر علی عرف ٹکااورمشتاق وغیر نے انے گھر میں گھس کر فائر کردی جس کے نتیجے میں انکی بیٹی سنیہ ہلاک ہوگئی جبکہ دوسری بیٹی شدید زخمی ہوگئی تاہم ملزمان اندھا دھند فائرنگ کرکے دندناتے ہوئے چلے گئے یہ دھمکیاں بھی دیں کہ اگر کسی نے انکے خلاف آواز اٹھائی تو وہ اپنی موت کو خوددعوت دے گا ۔متاثر ہ باپ نے بتایا کہ ان 22سالہ بیٹی سنیہ کو ملزمان نے ہلاک کیا تو انکے خلاف متاثرہ خاندن کی جانب سے مقدمہ ناروال کے تھانہ مدو ملہی میں درج کروادیا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...