آئی ایم ایف نے اپنے سالانہ نگرانی کے ضابطوں میں تبدیلی کی منظوری دیدی

آئی ایم ایف نے اپنے سالانہ نگرانی کے ضابطوں میں تبدیلی کی منظوری دیدی

واشنگٹن (اے پی پی) عالمی مالیاتی ادارہ آئی ایم ایف نے اپنے سالانہ ضابطوں میں تبدیلی کےلئے منظوری دیدی۔ آئی ایم ایف اینول سرویلنس رولز میں تبدیلی سے اس بات کا جائزہ لینے کےلئے آئی ایم ایف کی کسی بھی ملک کی مقامی مالیاتی پالیسیوں تک ضروری رسائی حاصل ہوجائے گی جس سے آئی ایم ایف کےلئے یہ پتہ چلانا ممکن ہوگا کہ کسی ملک کی مقامی پالیسیاں عالمی مالیاتی استحکام کو نقصان نہیں پہنچا رہیں۔ اس سے قبل آئی ایم ایف کی مقامی پالیسیوں کے مطالعے کےلئے رضاکارانہ رسائی دی جارہی تھی لیکن حالیہ عالمی و یورو زون مالیاتی بحران نے اس بات کو ظاہرکیا ہے کہ کسی ملک کی مالیاتی پالیسیاں کس طرح سرحدیں پار کرکے عالمی نظام کو غیرمستحکم کرسکتی ہیں۔ آئی ایم ایف نے سرویلنس ضابطوں میں تبدیلی کو ایک اہم فیصلہ قرار دیا ہے۔ آئی ایم ایف کی منظور کردہ تبدیلی اس کے تمام رکن 188 ممالک پر لاگوہوگی۔ 2009ءمیں آئی ایم ایف نے کرنسی سرویلنس پالیسی کا اعلان کیا تھا جس کے ساتھ چین نے تعاون سے انکار کیا۔ نئی تبدیلی کے بارے دستاویزی تفصیلات آئندہ ہفتے جاری ہونگی۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...