استثنیٰ کا قانون 40برس بعد اسلامی اسالیب کے مخالف قرار دے کر لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج

استثنیٰ کا قانون 40برس بعد اسلامی اسالیب کے مخالف قرار دے کر لاہور ہائی کورٹ ...
 استثنیٰ کا قانون 40برس بعد اسلامی اسالیب کے مخالف قرار دے کر لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک )چالیس سال بعد پاکستان کے دستور کی شق کو قرآن و سنت اور صحابہ کرام ؓکے بتائے ہوئے راستے کے منافی اور انصاف کے بنیادی اصولوں کے برعکس قرار دیکرلاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا گیا ۔1973ءکے آئین کی شق 248کے تحت صدر، وزیر اعظم ، وزراءاور ججوں کو سرکاری فرائض کی ا نجام دہی کے دوران قانونی عدالتی کارروائی اور گرفت سے استثنیٰ حاصل ہے ۔ درخواست گذار رانا محمد جمیل ایڈووکیٹ کا موقف ہے کہ اس شق میں دی جانے والی رعایت ملک کے دستور کے ساتھ ساتھ انصاف کے فطری اصولوں اور اسلامی اکابرین کی عملی زندگی کے منافی ہے اس لئے اسے آئین سے حذف کرنے کا اہتمام کیا جائے ۔

مزید : قومی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...