کشمیری قوم کے پاس آزادی کے علاوہ کو ئی آپشن نہیں،شفیق الرحمن

کشمیری قوم کے پاس آزادی کے علاوہ کو ئی آپشن نہیں،شفیق الرحمن

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر )کشمیری قوم گولیوں کا سامنا کر رہے ہیں ، آزادی کے علاوہ کوئی دوسرا آپشن نہیں ہے ،کشمیری قوم اس دن سے بھارت سے لڑ رہی ہے جب سے بھارتی فوج کشمیرمیں داخل ہوئی ، بھارت کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزی کر رہا ہے ، برہان وانی کی شہادت کے بعد جو تحریک چل رہی ہے وہ تحریک تکمیل پاکستان کا تسلسل ہے ، پاکستان کی حکومت ، آرمی چیف سمیت ہر طبقے کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے کشمیریوں کے لیے آواز بلند کی ، کشمیر کارواں سے کشمیری قوم کو مثبت پیغام جائے گا اور حوصلے بلند ہوں گے ، تاجربرادری ، طلباء وکلاء ، سول سوسائٹی کی تنظیمیں کشمیر کارواں کا بھرپور استقبال کریں گی ، کشمیر کے حوالہ سے حافظ سعید کی جدو جہد کو خراج تحسین پیش کر تے ہیں ان کا نام کشمیرکی تحریک کا حصہ بن چکا ہے ان خیالات کا اظہار تحریک آزادی جموں کشمیر میں شامل جماعتوں حریت کانفرنس جماعۃ الدعوۃ انجمن تاجران کے رہنماؤں نے کشمیر کارواں کے سلسلہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ۔ جامع مسجد قباء آئی ایٹ میں ہونے والی پریس کانفرنس میں جماعۃ الدعوۃ اسلام آباد کے مسؤل شفیق الرحمن ، آل پارٹیز حریت کانفرنس کے رہنما الطاف احمد بھٹ ، عبدالحمید لون ، انجمن تاجران کے رہنما اجمل بلوچ ، کشمیری رہنما عبدالمتین ودیگر رہنماؤں نے خطاب کیا شفیق الرحمن نے کہا کہ کشمیریوں کی تیسری نسل قربانیاں پیش کر رہی ہے ، بھارتی گولیوں کے آگے وہ اپنا سینہ پیش کر رہے ہیں اور آزادی کے علاوہ کسی دوسرے آپشن پر وہ راضی نہیں ہیں بھارت نے کشمیر میں ظلم و بربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے ، بھارت اپنی تمام طاقت کے بوجود بھی کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دبا نہیں سکا اس نے کشمیرمیں پابندیاں لگا کر اسے دنیا سے علیحدہ کرنے کی کوشش کی ہے لیکن اس کی یہ خام خیالی ہے کہ وہ اس طرح کشمیریوں کو دبا سکے کشمیر کارواں سے ہم اپنے مظلوم بھائیوں کو یہ پیغام دیں گے کہ آزادی کی جدوجہد میں وہ تنہا نہیں ہیں اس کارواں میں پنجاب سندھ بلوچستان گلگت بلتستان کے لوگوں کی بھی نمائندگی شامل ہیں پاکستان کے ہر کونے سے کشمیریوں کے لیے آواز بلند کریں گے جی ٹی روڈ سے آنے والے کارواں کا ہر شہر میں پرتپاک استقبال ہو رہا ہے اسلام آباد کے تاجر وکلاء طلباء سول سوسائٹی کی تنظیمیں اور شہری زیرو پوائنٹ پر کارواں کا والہانہ استقبال کریں گے ۔آل پارٹیز حریت کانفرنس کے رہنما الطاف بھٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ برہان وانی کی شہادت کے بعد جس تحریک کا آغاز ہوا ہے دراصل یہ وہی تحریک تکمیل پاکستان ہے جو اس وقت شروع ہوئی تھی جب پاکستان بنا تھا ، کشمیری بھارت سے اسی وقت سے لڑ رہے ہیں جب سے بھارت کی فوج کشمیر میں داخل ہو ئی ہے میڈیا کی ذمہ داری ہے کہ جس طرح بھارت کا میڈیاکشمیر یوں کے خلاف پراپیگنڈا کر رہا ہے وہ دنیا کے سامنے اصل تصویر پیش کریں جب بھی کشمیر میں کوئی خوشی یا غمی کا واقعہ ہوتا ہے تو کشمیر ی جیوے جیوے پاکستان کے نعرے لگاتے ہوئے باہر نکل آتے ہیں اور سبز ہلالی پرچم لہرا کر اپنی وابستگی کا اظہار کرتے ہیں ہم پاکستان کی حکومت ، آرمی چیف اور ہر اس تنظیم کے شکر گزار ہیں جنہوں نے کشمیریوں کے لیے آوا ز بلند کی جب پاکستان سے کشمیریوں کے حق میں لوگ نکلتے ہیں تو ہمارے بچوں اور جوانوں کے حوصلے بلند ہو جاتے ہیں ہم تمام دینی سیاسی جماعتوں اور سول سوسائٹی کی تنظیموں سے اپیل کر تے ہیں کہ وہ بھی کشمیر کارواں کا حصہ بنیں اور کشمیری قوم کو اپنا پیغام دیں کہ پاکستان کے لوگ ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں پاکستانی حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کشمیر میں ذخمی ہونے والے کشمیریوں کے علاج کے لیے دباؤ دالے اور پاکستان کے ہسپتالوں میں ان کا علاج کیا جائے عبدالحمید لون نے کہا کہ کشمیر میں بھارت انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کر رہا ہے ، ہمارا اخبارات کوضبط کیا جارہا ہے الیکٹرانک میڈیا کو بند کیا جا رہا ہے سوشل میڈیا پر پابندیاں ہیں عالمی تنظیموں کو کشمیر تک رسائی نہیں دی جارہی بھارتی فوجیوں نے کشمیریوں کے خلاف پیلٹ گن کا استعمال کیا جس سے دو سے زائد نوجوان اپنی بینائی کھو بیٹھے ہیں ، بھارتی عقوبت خانوں میں ہزاروں نوجوانوں کو بدترین کا تشدد بنایا جا رہا ہے کشمیر میں خونی کھیل کھیلا جا رہا ہے انسانی حقوق کی تنظیمیں اس کھیل کو بند کرانے کے لیے اپنا کردا ر ادا کریں اقوام متحدہ ابھی تک موثر کردار ادا نہیں کر سکی اگرمشرقی تیمور اور دارفور میں ریفرنڈم ہو سکتا ہے تو کشمیر کے عوام کو حق کیوں نہیں دیا جاتا ۔ کشمیریوں کا ایک ہی مطالبہ ہے اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیریوں کی امنگوں کے مطابق اس مسئلہ کو حل کیا جائے او آئی اسی ہنگامی طور پر مسلم ممالک کی عالمی کانفرنس بلائے انجمن تاجران کے رہنما اجمل بلوچ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جس دن کشمیر آزاد ہو گا حافظ محمد سعید کا نام سنہری حروف میں لکھا جائے گا کشمیری سب سے ذیادہ محبت حافظ سعید سے کرتے ہیں ان کانام کشمیر کی تحریک آزادی کی پہچان بن چکا ہے پاکستان کی تاجر برادری حافظ سعید اور کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے اور حافظ سعید کے کشمیر کارواں کا والہانہ استقبال کیا جائے گا کشمیر رہنما عبدالمتین نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا نفاذ ہے ہمارے رہنما ؤں کو گرفتارکیا جا رہا ہے قائد اعظم نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قرار دیا تھا سید علی گیلانی آسیہ اندرابی سمیت تمام رہنماؤں کو رہا کیا جائے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...