سیوریج سسٹم ناکارہ، صاف پانی نہ سٹریٹ لائٹس، چوہنگ مسائلستان بن گیا

سیوریج سسٹم ناکارہ، صاف پانی نہ سٹریٹ لائٹس، چوہنگ مسائلستان بن گیا

  

چوہنگ (نامہ نگار) یونین کونسل 258اور یونین کونسل 259 کو انتظامیہ ہو یا سیاسی لیڈران نے نظر انداز کر رکھا ہے۔ پی پی171کا کافی بڑا ووٹ بنک ہونے کے باوجود ایک لاکھ سے زائد آبادی پر مشتمل علاقے میں بنیادی سہولیات کا فقدان ہے۔ چوہنگ مسائلستان بنا ہوا ہے۔ پورے علاقے میں ایک بھی پارک نہ ہی کھیلوں کے میدان ہیں۔ پورے علاقہ میں صاف پانی کی فراہمی کے لیے واٹر فلٹریشن پلانٹس کی تنصیب کی ضرورت ہے جو فلٹریشن پلانٹس لگائے ہیں وہ بھی ناکارہ ہو چکے ہیں یا بند ہیں۔پنجگرائیں،بلال کالونی،شاداب کالونی،محلہ مغلاں،حیدری کالونی، کمبوہ کالونی میں سیوریج سسٹم موجود نہیں۔ پکی سڑک موجود نہیں۔گلیوں میں گندہ پانی کھڑا رہتا ہے۔ گزرنا محال ہوتا ہے یہاں تک جنازہ گذارنا مشکل ہو جاتا ہے۔بلال کالونی اور کمبوہ کالونی میں بجلی کی تاروں کا جال بچھا ہوا ہے۔پورے علاقے میں پارکنگ اور ٹیکسی سٹینڈ موجود نہیں۔علاقہ بھر میں سٹریٹ لائٹس موجود نہیں ہیں۔ مون سون کی ابھی آمد ہی ہوئی ہے کہ شاداب کالونی مین بازار، پنجگرائیں محلہ اور بلال کالونی میں گٹروں اور بارش کا پانی جمع ہے جو گندے تالاب اور جوہڑ کا منظر پیش کر رہے ہیں۔ عوام کی آمدورفت کے مسائل ہیں اور مچھروں کی آماجگاہ بن گئے ہیں۔سیاسی لیڈران ووٹ لینے کے بعدایک بھی وعدہ وفا نہیں کرتے۔دو سال میں یونین کونسل میں موجودہ حکومت نے ایک روپے کا کام نہیں کروایا۔ مکینوں نے مطالبہ کیا ہے کہ چوہنگ میں ہنگامی بنیادوں پر بنیادی سہولیات کی فراہمی کے اقدامات کیے جائیں اور ترقیاتی منصوبوں میں چوہنگ کو جائز حصہ فراہم کیا جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -