قربانی کے جانور، اور ان کی منڈیاں

قربانی کے جانور، اور ان کی منڈیاں

  

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ہدایت کی ہے کہ شہروں میں قربانی کے جانوروں کی خرید و فروخت کو روکا جائے اور مویشی منڈیاں شہری حدود سے باہر لگانے کو یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ عیدالاضحی کے حوالے سے جو ایس او پیز بنائے گئے ہیں ان پر عمل بھی یقینی بنایا جائے کہ کورونا وائرس پھیل نہ سکے۔ عیدالفطر کے موقع پر سہولتیں دی گئیں تو تاجروں اور شہریوں نے وبا کے خطرے کی پرواہ نہیں کی تھی، اس کے بعد کورونا کے متاثرین بڑھ گئے تھے، اسی تجربے کے پیش نظر عیدالاضحی اور محرم الحرام کی آمد کے حوالے سے بھی احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ عیدالاضحی کے قریب آتے ہی شہروں سے باہر متعینہ مقامات پر تو مویشی منڈیاں لگنا شروع ہو گئی ہیں، بیوپاریوں نے اس پر مکمل عمل نہ کیا اور روایت کے مطابق جانور شہروں میں بھی لے آئے، شکایات ملنے پر ہی وزیراعلیٰ نے ہدایات جاری کی ہیں۔لاہور شہر میں بھی ایسا ہی ہوا،غیر قانونی اور ممنوعہ مقامات پر چھوٹی منڈیاں لگا لی گئیں اور گلی، محلوں میں بھی جانور لے کر گھومنے والے آ گئے۔کمشنر لاہور ڈویژن کی نگرانی میں بعض مقامات پر چھاپے بھی مارے گئے، اس کے باوجود حالات پر مکمل قابو نہیں پایا جا سکا،انتظامیہ کو جہاں وزیراعلیٰ کی ہدایت پر عمل کرانے کے لیے اقدامات کرنا ہیں، وہاں شہریوں کا بھی فرض ہے کہ وہ ہدایات اور احتیاطی تدابیر پر مکمل عمل کریں، اس میں خود ان کی بھلائی ہے کہ حکومت اور عوام کے تعاون سے ہی وبا کے پھیلاؤ پر قابو پانا ممکن ہو سکے گا۔پنجاب کے علاوہ دوسرے تین صوبوں میں بھی انتظامیہ کو چوکس رہنا چاہیے۔سندھ، خیبرپختونخوا اور بلوچستان میں بھی اس حوالے سے شکایات موصول ہو رہی ہیں۔

مزید :

رائے -اداریہ -