وائرس کے پھیلا و سے صورتحال بگڑتی جارہی ہے: سید ابن علی

  وائرس کے پھیلا و سے صورتحال بگڑتی جارہی ہے: سید ابن علی

  

کوہاٹ (بیورورپورٹ)کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے صورتحال دن بدن بگڑتی جارہی ہے تقریبا ہر شہر گاوں اور محلہ میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد موجود ہیں اس حوالے سے علاقہ بنگش سابق چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ سید ابن علی کی رہائش گاہ پرایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں سابق چیف ایگزیکٹو آفیسر آغا خان ہیلتھ سروس اور میڈیکل آفیسر WHOڈاکٹر سید ذوالفقار علی شاہ مصالحتی کمیٹی چیئرمین تھانہ استرزئی ملک منظر حسین صوبائی صدر شیعہ علماء کونسل علامہ حمید حسین امامی امامیہ کونسل رہنما علامہ سید قیصر عباس الحسینی علامہ باقرحسین علامہ علم رضا مجلس وحدت مسلمین صوبائی پولیٹیکل سیکرٹری حاجی خاکسار علی کے علاوہ علاقہ بھر کے مشران نے بھر پور شرکت کی تقریب انعقاد کا بنیادی مقصد عید الاضحی اور محرم الحرم اور موجودہ کورونا وباء کی وجہ سے صورتحال کا جائزہ اورتجویز اور آئندہ لائحہ عمل تیار کرنا تھا مقررین نے اپنے خطاب میں کہا کہ عید الاضحی کے لئے جانوروں کی خریداری کے وقت بھی تمام حفاظتی تدابیر کا خیال رکھیں اور محرم الحرم کے ایام میں عزاداروں کا اہتمام نہایت احتیاط سے کریں تاکہ تمام عزادار ان کے خاندان کے بزرگ اوررضاکار بحفاظت اپنی ذمہ داریاں پوری کریں انھوں نے کہا کہ ماتمی جلوسوں اورمجالس میں خواتین اورمردحضرات جن کی عمر 55سال سیزیادہ ہو یا ان کو دل سینے دمہ یا ذیابیطس کی تکلیف ہو ان کے لئے بہتر یہی ہے کہ وہ شرکت نہ کریں امام بارگاہوں میں مجالس کے دوران منتظمین اس بات کو یقینی بنائیں کہ عزاداروں اور حاضرین میں ہر ایک دوسرے سے کم ازکم چھ فٹ کے فاصلہ پر بیھٹیں مجالس اورجلوس کے دوران تمام حاضرین ماسک لگائے رکھیں اور ہر داخلی اور خارجی راستوں میں ہاتھ دھونے کے لئے مناسب انتظام ہوناچاہیئے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -