چاول کی آڑ میں بے ہوشی کے انجکشن سمگل کیے جانے کا انکشاف

چاول کی آڑ میں بے ہوشی کے انجکشن سمگل کیے جانے کا انکشاف
چاول کی آڑ میں بے ہوشی کے انجکشن سمگل کیے جانے کا انکشاف

  

کراچی(ویب ڈیسک) ایف آئی اے کارپوریٹ کرائم سرکل نے رائس ایکسپورٹ کی آڑ میں اسمگل کیے جانے والے بے ہوشی کے انجکشنز کی بڑی تعداد قبضے میں کرلی۔ایف آئی اے کارپوریٹ کرائم سرکل اور فیڈرل ڈرگ انسپکٹر نے حسین آباد کے علاقے میں مشترکہ کارروائی کی۔ اس دوران رائس ایکسپورٹ پر مبنی کنٹینر کی آڑ میں مریضوں کو بے ہوش کرنے والے انجکشنز کی بڑی تعداد برآمد کرلی گئی۔

ڈائریکٹر ایف آئی اے منیر شیخ کے مطابق برآمد شدہ انجکشنز کی مالیت 5 لاکھ 10 ہزار امریکی ڈالرزہے، کیٹامن انجکشنز مریضوں کو بے ہوش کرنے کے علاوہ نشے کے لیے بھی استعمال کیے جاتے ہیں۔ برآمد کیئے گئے انجکشنز، ایک کلو والے 170 پیکٹس کی صورت میں رائس کے پیکٹس میں شامل کیے گئے تھے۔ایکسپورٹ کی غرض سے رائس کنٹینر اور ٹرک قبضے میں کرلیے گئے جبکہ ایک شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے رو¿ف شیخ کے مطابق کنسائنمنٹ سیالکوٹ کی ایم ایس ٹیڈک ٹریڈنگ نامی جعلی کمپنی نے بیلجیم کے لیے روانہ کرنی تھی، انجکشنز کی اسمگلنگ میں ملوث ڈرگ اسمگلر داو¿د الرحمان گرفتار ہے جبکہ حفظ الرحمان مفرور ہے۔ بیلجیم حکومت کی جانب سے ڈرگ اسمگلرز کے گروہ کے بارے میں تحقیقات کی تفصیلات فراہم کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -