وہ ملک جہاں ہزاروں افراد کو کورونا وائرس کے جعلی ٹیسٹ نتائج دے دیے گئے

وہ ملک جہاں ہزاروں افراد کو کورونا وائرس کے جعلی ٹیسٹ نتائج دے دیے گئے
وہ ملک جہاں ہزاروں افراد کو کورونا وائرس کے جعلی ٹیسٹ نتائج دے دیے گئے

  

ڈھاکہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)دنیا بھر میں کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کا سلسلہ جاری ہے۔ اس وائرس نے جہاں پوری دنیا پر گہرے اثرات مرتب کیے ہیں وہیں اس وبا کے دوران متعدد عجیب و غریب خبریں بھی سامنے آئی ہیں۔

اس وائرس سے جڑی کئی سازشی تھیوریز نے بھی جنم لیا مگر بنگلہ دیش کے ایک ہسپتال نے تو حد ہی کردی جہاں لوگو ں ہزاروں افراد کی جعلی سکریننگ کرکے انہیں جعلی ٹیسٹ رپورٹس پکڑا دی گئیں۔

بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں ایک ہسپتال کے مالک سمیت ایک درجن سے زیادہ افراد کو ہزاروں مریضوں کو ایسے جعلی سرٹیفیکیٹ دینے پر گرفتار کیا گیا جن پر بغیر ٹیسٹ کیے لکھا گیا تھا کہ آپ کورونا وائرس سے متاثر نہیں ہیں۔

بی بی سی کے مطابق بنگلہ دیش میں حکام کا کہنا ہے کہ ملک میں جعلی سکریننگ سکینڈل سامنے آنے کے بعد کورونا وائرس ٹیسٹ کروانے والے لوگوں کی تعداد میں تقریباً 50 فیصد تک کمی دیکھنے میں آئی ہے۔

جون کے اواخر میں ملک میں 18 ہزار سے زیادہ ٹیسٹ کیے جا رہے تھے تاہم گزشتہ دو ہفتوں سے یہ تعداد گر کر 10 ہزار کے لگ بھگ ہوگئی  ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سکینڈل کے بعد عوام میں ٹیسٹنگ سے متعلق عدم اعتماد پایا جاتا ہے۔

واضح رہےبنگلہ دیش میں اب تک دو لاکھ سے زیادہ افراد اس وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں جبکہ 2618 اس کے باعث ہلاک بھی ہوئے ہیں۔

یاد رہے کورونا وائرس سے دنیا بھر میں متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 44 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اب تک اس مرض کے باعث چھ لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -