”لاہوراورنج لائن ٹرین بہت جلد عوام کیلئے کھول دی جائے گی“چیئرمین سی پیک اتھارٹی نے لاہورکے شہریوں کیلئے خوشخبری سنا دی

”لاہوراورنج لائن ٹرین بہت جلد عوام کیلئے کھول دی جائے گی“چیئرمین سی پیک ...
”لاہوراورنج لائن ٹرین بہت جلد عوام کیلئے کھول دی جائے گی“چیئرمین سی پیک اتھارٹی نے لاہورکے شہریوں کیلئے خوشخبری سنا دی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیئرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ نے سینٹ کی سی پیک کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا لاہوراورنج لائن ٹرین بہت جلد عوام کیلئے کھول دی جائے گی،اورنج لائن منصوبہ سیاسی نہیں ہے،ہمیں ہدایت کی گئی تھی کوئی منصوبہ رکنا نہیں چاہئے ۔ممبرکمیٹی اسد اشرف نے سوال کیا کیا اورنج لائن سیاسی مسئلہ ہے؟اجلاس میں بریفنگ کے دوران کہاگیا اورنج لائن ٹرین کاکچھ سول ورک رہتا تھا،عاصم سلیم باجوہ نے کہاکہ اورنج لائن منصوبے کیلئے 1600 افراد بھرتی کئے جائیں گے

میڈیا رپورٹس کے مطابق سینیٹر شیری رحمان کی سربراہی میں سی پیک کمیٹی کا اجلاس ہوا،سینیٹر شیری رحمان کی اجلاس میں ارکان کمیٹی اور شرکاکو ماسک پہنے اور دور بیٹھنے کی ہدایت کی،چیئرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ نے سینیٹ کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ احکامات ملے تھے کہ سی پیک اہم ہے ،کوئی پراجیکٹ رکنا نہیں چاہیے، آزاد کشمیر حکومت کے ساتھ 100سے زائد پرمنصوبے سائن کیے، سستی بجلی کے لیے ہائیڈرل پاور پراجیکٹ لگانا ہمارا منصوبہ ہے۔

چیئرمین سی پیک اتھارٹی نے کہاکہ جوانوں کو نوکریوں دینا ہمارے منصوبے میں شامل ہے،کوہالہ پاور پراجیکٹ پر گزشتہ ہفتے دستخط ہوئے۔

عاصم سلیم باجوہ نے کہاکہ آگے ہونے والے پراجیکٹس تھر میں ہوں گے،گواردر کا 400 میگاواٹ پراجیکٹ لیز مسئلے کی وجہ سے پھنسا ہوا تھا،خضداراور بلوچستان میں مسائل کے حل کے لیے مختلف منصوبے ہیں،وزیراعظم نے 17 بلین روپے سدرن گرڈ کے لیے منظور کیے،گواردر پورٹ پر بجلی ایران سے آ رہی ہے جس کے بہت سے مسائل ہیں۔

چیئرمین سی پیک اتھارٹی نے کہاکہ تھر میں بلاک ٹو میں کام ہو رہا ہے،شنگھائی الیکٹرک کے ساتھ مل کر تھر کے بلاک ون پر کام ہو رہا ہے، درآمد کوئلے سے فیول کی پیداوار پر جائیں گے۔

عاصم سلیم باجوہ نے کہاکہ کوئلے سے کیمیکلز نکالنے کے حوالے سے مشاورت کر رہے ہیں،گیس کے معاملے پر کام ہو رہا ہے،کوئلے کی کان لگانے کے لیے 105 کلومیٹر کی ریلوے لائن درکار ہے، 105کلومیٹر کی ریلوے لائن کے لیے پلاننگ کمیشن سے بات ہو رہی ہے،چیئرمین سی پیک اتھارٹی نے کہاکہ تمام پراجیکٹس وزارتوں کے اشتراک سے ہو رہے ہیں،گلگت بلتستان میں بجلی کا بڑا مسئلہ ہے،چینی کمپنیاں سے کمراٹ گاوَں میں سڑکیں اور بجلی پر مشاورت چل رہی ہے۔

چیئرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ نے کہاکہ سی پیک کا کسی بھی جگہ کام رکا نہیں ہے ،ڈی آئی خان سے ژوب تک سڑک کا کام ہو رہا ہے ،اسلام آباد سے ڈی آئی خان تک سڑک بن رہی ہے،شیری رحمان نے کہاکہ سی پیک پورے ملک کے لیے اہمیت کے حامل ہے، سی پیک پر تمام سیاسی جماعتوں کا اتفاق رہا ہے، سی پیک اتھارٹی میں صوبوں کی شراکت داری انتہائی اہم ہے، گوادر کے بغیر سی پیک آگے نہیں بڑھ سکتا۔

چیئرمین سی پیک اتھارٹی نے بتایا کہ رشکئی خصوصی اقتصادی زون کا افتتاح جلد کیا جا رہا ہے، فیصل آباد اقتصادی زون میں سرمایہ کاری کے لیے درخواستیں موصول ہورہی ہیں،دھابیجی خصوصی اقتصادی زون میں چینی سرمایہ کاری دلچسپی لے رہے ہیں، حب انڈسٹریل زون کے لیے اضافی زمین حاصل کی جارہی ہے، سی پیک جوائنٹ ورکنگ گروپ میں زراعت کو شامل کیا گیا ہے۔چیئرپرسن شیری رحمان نے چیئرمین سی پیک کی بریفنگ پر اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ سی پیک منصوبہ درست سمت میں بڑھ رہا ہے،چیئر مین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کی بریفنگ کو سراہتے ہیں،یہ جان کر مطمئن ہیں کہ سی پیک درست سمت میں جا رہا۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -