جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف نظر ثانی اپیل دائر کردی

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف نظر ثانی اپیل ...
جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف نظر ثانی اپیل دائر کردی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ سرینا عیسیٰ نے سپریم کورٹ کے عبوری فیصلے کے خلاف نظر ثانی کی اپیل دائر کردی۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق درخواست میں کہا گیا ہے کہ درخواست میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے استدعا کی ہے کہ سپریم کورٹ فیصلے پر نظر ثانی کر کے 19 جون کے عبوری حکم کو ختم کرے۔انہوں نے درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ ایف بی آر نے اہل خانہ کے خلاف کارروائی تفصیلی فیصلے سے پہلے ہی شروع کر دی۔ ایف بی آر کی درخواست گزار کی رہائش گاہ کے باہر نوٹس چسپاں کرنا بدنیتی پر مبنی ہے۔جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے درخواست میں استدعا کی ہے کہ حکومتی تحریری دلائل پر جواب جمع کرانے کا موقع دیا جائے۔

خیال رہے کہ 19 جون کو سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائز عیسی کی درخواست منظور کرتے ہوئے ان کے خلاف صدارتی ریفرنس کو کالعدم کر دیا تھا۔جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں دس رکنی فل کورٹ نے سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی فائز عیسی کیس کی سماعت کی تھی۔دلائل مکمل ہونے کے بعدعدالت کی جانب سے سنائے گئے مختصر فیصلے میں10 ججز میں سے 7 ججز نے جسٹس قاضی فائز کی اہلیہ کے ٹیکس معاملات ایف بی آر کو بھیجنے کا حکم دیا تھا۔فیصلے کے مطابق ایف بی آر کو حکم دیا گیا تھا کہ وہ جسٹس قاضی عیسیٰ کی اہلیہ کو پراپرٹی سے متعلق 7 روز میں نوٹسز جاری کرے۔فیصلے میں کہا گیا تھا کہ نوٹس جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کی سرکاری رہائشگاہ پر بھجوائے جائیں،نوٹس جاری کرنے کے بعد ایف بی آر 7 دن میں سپریم جوڈیشل کونسل کو رپورٹ جمع کرائے۔فیصلے کے مطابق چیئرمین ایف بی آر تمام تر معلومات سپریم جوڈیشل کونسل کو فراہم کرے گا۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -