سیاسی افق پر بے یقینی،انڈیکس میں484پوائنٹس کی کمی ،28677پوائنٹس پر بند

سیاسی افق پر بے یقینی،انڈیکس میں484پوائنٹس کی کمی ،28677پوائنٹس پر بند

  

                                                                                                       کراچی (اکنامک رپورٹر)کراچی اسٹاک ایکسچینج میںمندی کا تسلسل جاری ۔کاروباری ہفتے کے چوتھے روزجمعرات کوغیر معمولی مندی ریکارڈ کی گئی اور کے ایس ای 100انڈیکس29000,29100، 28800,28900اور28700کی نفسیاتی حد وں سے بیک وقت گرکر گذشتہ 15روز کی کم ترین سطح پرپہنچ گیا ۔سرمایہ کاوں کے مزید1کھرب 10ارب روپے سے ڈوب گئے، کاروباری حجم گزشتہ روز کی نسبت12.68فیصدزیادہ رہااور81.74 فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔ حکومتی مالیاتی اداروں، مقامی بروکریج ہاﺅسز، سمیت دیگر انسٹی ٹیوشنز کی جانب سے آئل ،سیمنٹ ،بینکنگ اور ٹیلی کام سیکٹر میں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا ۔ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 29213پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی دیکھا گیا ۔تاہم سیاسی افق پر بے یقینی کی کیفیت کے باعث مقامی سرمایہ کار تذبذب کا شکار نظر آئے اور انہوں نے اپنے حصص فروخت کرنے کو ترجیح دی،جس کے نتیجے تیزی کے اثرات زائل ہوگئے۔ مارکیٹ اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس483.61پوائنٹس کمی سے 28674.37پوائنس پر بند ہوا ۔اسٹاک ماہرین کے مطابق سیاسی میدان میں عدم استحکام کے منفی اثرات سرمایہ کاروں کو حصص کی خریداری میں محتاط رویہ اختیار کرنے پر مجبور کررہے ہیں اس کے علاوہ سیمنٹ ،تیل اور گیس سمیت ٹیلی کا م کے شعبے میں بھی حصص کی فروخت دیکھی جارہی ہے ،جس کے نتیجے میں رواں ہفتے مندی عروج پر ہے اور تقریباً ایک ہزار پوائنٹس کے قریب 100انڈیکس میں کمی دیکھی گئی ہے ۔۔مجموعی طور پرجمعرات کو367کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا ،جن میں سے54 کمپنیوں حصص کے بھاو¿ میں اضافہ،300کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں کمی جبکہ13کمپنیوںکے حصص کے بھاﺅ میں استحکام رہا۔ سرمایہ کاری مالیت میں1کھرب 10ارب94 کروڑ12 لاکھ16 ہزار110 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی۔ جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر67کھرب87ارب53کروڑ71لاکھ 99 ہزار698 روپے ہوگئی۔جمعرات کو کاروباری سرگرمیاں19کروڑ33لاکھ 48ہزار890شیئرز رہیں جوبدھ کے مقابلے میں2کروڑ17لاکھ 61ہزار640شیئرززائدہیں ۔قیمتوں کے اتار چڑھاو¿ کے حساب سے رفحان میظ کے حصص سرفہرست رہے ،جس کے حصص کی قیمت199.00روپے اضافے سے10799.00 روپے،باٹا پاک کے حصص کی قیمت34.58روپے اضافے سے3202.08روپے پر بند ہوئی۔نمایاں کمی پاک ٹوبیکو کے حصص میں ریکارڈ کی گئی جس کے حصص کی قیمت64.66روپے کمی سے1322.67روپے جبکہ سیمنس پاکستان کے حصص کی قیمت63.66روپے کمی سے1253.00روپے پر بند ہوئی ۔جمعرات کولافریج پاکستان کی سرگرمیاں1کروڑ67لاکھ9ہزار500شیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں جس کے شیئرز کی قیمت37پیسے اضافے سے14.83روپے اورفوجی سیمنٹ کی سرگرمیاں1کروڑ 40لاکھ95ہزارشیئرزکے ساتھ دوسرے نمبر پر رہیں جس کے شیئرز کی قیمت 55پیسے کمی سے19.56روپے ہوگئی ۔کے ایس ای 30 انڈیکس342.55پوائنٹس کمی سے19717.18پوائنٹس ،کے ایم آئی 30انڈیکس844.65پوائنٹس کمی سے46071.05جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس348.76پوائنٹس کمی سے 21238.72پوائنٹس پر بند ہوا ۔

مزید :

کامرس -