قیدی پرتشدد سپرنٹنڈنٹ سنٹرل جیل کے خلاف درخواست،ملزم کا میڈیکل کروانے کا حکم

قیدی پرتشدد سپرنٹنڈنٹ سنٹرل جیل کے خلاف درخواست،ملزم کا میڈیکل کروانے کا حکم

  

لاہور(نامہ نگار)رشوت نہ دینے پر جیل میں قیدقتل کے ملزم عمیرپرتشدد کرنے والے سپرنٹنڈنٹ سنٹرل جیل کے خلاف دائر درخواست پر ایڈیشنل سیشن جج اعجاز بٹرنے ملزم کا میڈیکل کروانے کا حکم دیتے ہوئے ،سپرنٹنڈنٹ جیل اور اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ جیل کومیڈیکل اورمکمل ریکارڈ سمیت 25جون کو عدالت طلب کرلیا ہے ۔فاضل عدالت میں گزشتہ ملزم کی جانب سے میڈیکل کرانے کی درخواست پر سماعت ہوئی ۔ ملزم عمیر کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ گزشتہ روز جب ملزم کو عدالت میں پیشی کے لئے لایا جانے لگا تو اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ سنٹرل جیل محمد ظفر نے ملزم عمیر سے رشوت کا تقاضہ کیاجبکہ ملزم نے رشوت دینے سے انکار کر دیا، جس پر اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ محمد ظفر، ہیڈ وارڈن شوکت اور بشیر سے مل کر عمیر کو تشدد کا نشانہ بنایا، انہوں نے مزید بتایا کہ جیل افسران نے قانونی کارروائی سے روکتے ہوئے جان سے مار دینے کی دھمکی دی ہے،عدالت کے استفسار پر ملزم نے اپنے اوپر ہونے والے تشدد کے نشانات عدالت کو دکھائے، جبکہ عدالت نے ملزم پر کئے جانے والے تشدد کے نشانات کی تصاویر بطور ریکارڈ محفوظ کر لی ہیں۔ عدالت نے ملزم کا میڈیکل کرانے کا حکم دیا جبکہ عدالت نے ملزم عمیر کی استدعا پر پولیس کو تاکید کی کہ ملزم کا میڈیکل میاں منشی ہسپتال کے سوائے کسی بھی سرکاری ہسپتال سے کرایا جائے، عدالت نے سپرنٹنڈنٹ سنٹرل جیل اور اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ جیل کوآئندہ سماعت پرمیڈیکل سمیت مکمل ریکارڈ کے ساتھ عدالت میں پیش ہونے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -