منہاج القرآن کے ذمہ دارانپر مقدمات قابل افسو س ہیں،کامران سیف

منہاج القرآن کے ذمہ دارانپر مقدمات قابل افسو س ہیں،کامران سیف

  

 لاہور(جنرل رپورٹر)مسلم لیگ( ق) لاہور کے جوائنٹ سیکرٹری میاں کامران سیف نے سانحہ لاہورکے بعد طاہر القادری کے بیٹے اور منہاج القرآن کے تین ہزار کارکنوں کے خلاف قتل، دہشت گردی سمیت کئی دفعات کے تحت ایف آئی آر کے اندراج پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مجرم بھی وہی ، مدعی بھی وہی انصاف کی راہیں مسدود کردی گئیں ، عدالتی کمیشن کے فیصلہ سے قبل ہی حکمرانوں نے فیصلہ سنا دیا13گھنٹے تک گولیاں چلتی رہیں میڈیا نے براہ راست آپریشن دکھایا اور منہاج القرآن کی نہتی خواتین پر دست درازی اور نہتی خواتین اور نوجوانوں کو جس طرح گولیوں کا نشانہ بنایا گیا اس کی مثال دور آمریت میں بھی کہیں نہیں ملتی معصوم اور بے گناہ لوگوں کے خون سے ماڈل ٹاﺅن کی سڑکیں رنگین ہوگئیں لیکن حکمرانوں کے کانوں پر جوں تک نہ ر ینگی ، اور نہ ہی حکمرانوں کی جانب سے منہاج القرآن کے خلا ف آپریشن روکنے کی ہدایات جاری کی گئی ۔میاں کامران سیف نے کہا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ سے یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ تمام افراد گولیوں کا نشانہ بنے اور خون بہنے کے باعث شہید ہوئے۔انہوں نے کہا کہ شہیدوں کا خون رائیگاں نہیں جائے گا ذمہ داروں کا سب کو پتہ ہے عوام انصاف کے متلاشی ہیں انصاف مہیا نہ ہوا تو ایسی تحریک چلے گی کہ حکمران جماعت اور اس کے وزیر سب کچھ ختم ہوجائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -