گڈگورننس کا اصل مقصد درحقیقت عوام کا سول افسران پر اعتماد ہے ،گورنر پنجاب

گڈگورننس کا اصل مقصد درحقیقت عوام کا سول افسران پر اعتماد ہے ،گورنر پنجاب

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) پنجاب کے گورنر چودھری محمد سرور نے کہا ہے کہ گڈگورننس کا اصل مقصد درحقیقت عوام کا سول افسران پر اعتماد ہے اور سول افسران کی بھی یہ ذمہ داری ہے کہ عوام کے مسائل اور ان کے حل کے لیے ان کی توقعات پر پورا اتریں ۔انہو ں نے کہا کہ سول افسران ہمارے ملک کا اہم سرمایہ ہیں جنہیں عوام سے ایسارویہ اپنا نا چاہیے کہ وہ ان کے پاس جاتے ہوئے گھبراہٹ کی بجائے خوشی محسوس کریں ۔ ان خیالات کا اظہار انہو ں نے سول سروس اکیڈیمی میں اعلی سول افسران کے 41ویں کامن ٹریننگ پروگرام کی پاسنگ آؤٹ تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ عوام کی فلاح کے لیے بنائی جانے والی پالیسیاں خواہ کتنی بھی موثر ہوں ان کی کامیابی کا دارومدار عملدرآمد پر ہے ۔ سول افسران حکومتی پالیسیو ں کی تیاری سے لے کر ان پر عملدرآمد تک ہر سطح پر اپنا موثر کردار ادا کریں۔انہو ں نے کورس مکمل کرنے والے افسران ، ان کے والدین اور اساتذہ کو مبارکباد دیتے ہوئے پروبیشنرز کو ہدایت کی کہ وہ قائداعظم ؒ کے رہنما اصولوں پر عمل کرتے ہوئے خود کو حقیقی معنوں میں عوام کی خدمت کے لیے وقف کردیں ۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ یہ بات خو ش آئند ہے کہ دیگر شعبوں کی طرح سول سروسز میں بھی خواتین کے رجحان میں اضافہ ہو رہا ہے ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سول سروسز اکیڈیمی کی ڈائریکٹر جنرل عارفہ صبوحی اور نیشنل سکول آف پبلک پالیسی کے ریکٹر اسماعیل قریشی نے بھی خطاب کیا اور کورس کے مختلف پہلوؤں پر روشنی ڈالی ۔اس موقع پر گورنر نے ٹریننگ کے دوران مختلف شعبو ں میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے پروبیشنرز کو میڈل او ر اسناد تقسیم کیں ۔قبل ازیں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 120سے تعلق رکھنے والے مسلم لیگ نون کے کارکنوں نے عظمت سعید کی قیادت میں گورنر پنجا ب چودہری محمدسرور سے ملاقات کی۔

گورنر چودھری سرور

شہباز شریف کاسیکرٹر ی انرجی پر عدم اعتماد، توانائی منصوبوں کی نگرانی کیلئے گریڈ 20کا افسر مقرر

تمام ایم او یوز اور خط کتابت وزیر اعلیٰ کے کوآرڈینیٹر ندیم اسلم چوہدری کے ذریعے ہو گی

سیکرٹری انرجی جہانزیب خان کی کارکردگی سوالیہ نشان بن گئی، کام میں رکاوٹیں بھی آسکتی ہیں

لاہور(محمد نواز سنگرا//انویسٹی گیشن سیل)سیکرٹر ی انرجی پر اعتماد کا فقدان یا انرجی پراجیکٹس کی کڑی نگرانی۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے گریڈ 20کے افسر کو توانائی منصوبوں کی دیکھ بھال کی ذمہ داری سونپتے ہوئے کوآرڈینیٹر مقرر کر دیا جبکہ بیشتر محکمے گریڈ20کے افسران سے محروم ہیں جہاں گریڈ18یا 19 کے افسران سکیل 20کی سیٹوں پر کام کر رہے ہیں۔ تمام ایم او یوز اور خط کتابت وزیر اعلیٰ کے کوآرڈینیٹر برائے انرجی ندیم اسلم چوہدری کے ذریعے ہو گی جس سے سیکرٹری انرجی جہانزیب خان کی کارکردگی سوالیہ نشان بن گئی۔محکمہ انرجی میں دو ڈی ایم جی افسران کی بجائے کوآردڈینیٹرکی سیٹ پر گریڈ17یا18کا افسر بھی تعینات کیا جا سکتا تھا۔توانائی منصوبوں کی مد میں سیکرٹر ی انرجی جہانزیب خان،ڈی جی میٹرو بس سبطین فضل چلم اور ندیم اسلم چوہدری چائنہ،یواے ای اور ترکی کے دورے بھی کر چکے ہیں۔وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے ایک ہی محکمے میں ڈی ایم جی گروپ گریڈ 20کے دو افسران تعینات کر دیئے جس سے ایک ہی قد وکاٹھ کے دو افسران کی وجہ سے کام میں رکاوٹیں بھی آسکتی ہیں۔ایوان وزیر اعلیٰ پنجاب میں بیٹھ کر چوہدری ندیم اسلم وزیر اعلیٰ پنجاب کو صوبے کے مختلف شہروں میں جاری توانائی منصوبوں پر آگاہی دیں گے اور اس ضمن میں نچلی سطح پر وزیر اعلیٰ کے احکامات پہنچائیں گے۔نومنتخب کوآرڈنیٹرحال ہی میں گریڈ 20میں پرموٹ ہوئے ہیں جو کہ پنجاب میں ترکی ،چائنہ اور یو ای اے کے تعاون سے جاری پراجیکٹس کی وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ سے برائے راست نگرانی کریں کے اور وزیر اعلیٰ کی معاونت کریں گے۔واضح رہے کہ ہائیڈل،بائیوگیس،بائیو ماس،کول پاور اور سولر انرجی کے منصوبے پنجاب کے مختلف شہروں ملتان،گوجرانوالہ،ساہیوال،فیصل آباد،مظفر گڑھ اور بہاولپور کے اضلاع جاری ہیں۔

سیکرٹر ی انرجی پر عدم اعتماد

شہباز شریف کاسیکرٹر ی انرجی پر عدم اعتماد، توانائی منصوبوں کی نگرانی کیلئے گریڈ 20کا افسر مقرر

تمام ایم او یوز اور خط کتابت وزیر اعلیٰ کے کوآرڈینیٹر ندیم اسلم چوہدری کے ذریعے ہو گی

سیکرٹری انرجی جہانزیب خان کی کارکردگی سوالیہ نشان بن گئی، کام میں رکاوٹیں بھی آسکتی ہیں

لاہور(محمد نواز سنگرا//انویسٹی گیشن سیل)سیکرٹر ی انرجی پر اعتماد کا فقدان یا انرجی پراجیکٹس کی کڑی نگرانی۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے گریڈ 20کے افسر کو توانائی منصوبوں کی دیکھ بھال کی ذمہ داری سونپتے ہوئے کوآرڈینیٹر مقرر کر دیا جبکہ بیشتر محکمے گریڈ20کے افسران سے محروم ہیں جہاں گریڈ18یا 19 کے افسران سکیل 20کی سیٹوں پر کام کر رہے ہیں۔ تمام ایم او یوز اور خط کتابت وزیر اعلیٰ کے کوآرڈینیٹر برائے انرجی ندیم اسلم چوہدری کے ذریعے ہو گی جس سے سیکرٹری انرجی جہانزیب خان کی کارکردگی سوالیہ نشان بن گئی۔محکمہ انرجی میں دو ڈی ایم جی افسران کی بجائے کوآردڈینیٹرکی سیٹ پر گریڈ17یا18کا افسر بھی تعینات کیا جا سکتا تھا۔توانائی منصوبوں کی مد میں سیکرٹر ی انرجی جہانزیب خان،ڈی جی میٹرو بس سبطین فضل چلم اور ندیم اسلم چوہدری چائنہ،یواے ای اور ترکی کے دورے بھی کر چکے ہیں۔وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے ایک ہی محکمے میں ڈی ایم جی گروپ گریڈ 20کے دو افسران تعینات کر دیئے جس سے ایک ہی قد وکاٹھ کے دو افسران کی وجہ سے کام میں رکاوٹیں بھی آسکتی ہیں۔ایوان وزیر اعلیٰ پنجاب میں بیٹھ کر چوہدری ندیم اسلم وزیر اعلیٰ پنجاب کو صوبے کے مختلف شہروں میں جاری توانائی منصوبوں پر آگاہی دیں گے اور اس ضمن میں نچلی سطح پر وزیر اعلیٰ کے احکامات پہنچائیں گے۔نومنتخب کوآرڈنیٹرحال ہی میں گریڈ 20میں پرموٹ ہوئے ہیں جو کہ پنجاب میں ترکی ،چائنہ اور یو ای اے کے تعاون سے جاری پراجیکٹس کی وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ سے برائے راست نگرانی کریں کے اور وزیر اعلیٰ کی معاونت کریں گے۔واضح رہے کہ ہائیڈل،بائیوگیس،بائیو ماس،کول پاور اور سولر انرجی کے منصوبے پنجاب کے مختلف شہروں ملتان،گوجرانوالہ،ساہیوال،فیصل آباد،مظفر گڑھ اور بہاولپور کے اضلاع جاری ہیں۔

سیکرٹر ی انرجی پر عدم اعتماد

مزید :

صفحہ آخر -