رکاوٹوںکے بہانے تعلیمی مرکز پر چڑھائی ناقابل برداشت ہے،لیاقت بلوچ

رکاوٹوںکے بہانے تعلیمی مرکز پر چڑھائی ناقابل برداشت ہے،لیاقت بلوچ

  

لاہور (سٹاف رپورٹر ) ملی یکجہتی کونسل نے منہاج القرآن کے کارکنوں پر بدترین پولیس گردی اور معصوم لوگوں کی ہلاکتوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ 20 مئی کو ملک بھر کی مساجد میں خطابات جمعہ میں اس واقعہ کی پرزور مذمت کی جائے گی ۔سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے حوالے سے گزشتہ روزملی یکجہتی کونسل کا ہنگامی اجلاس ہوا۔اجلاس کے بعد دیگر رہنماﺅں کے ہمراہ میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے لیاقت بلوچ نے کہاکہ جب تک سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات مکمل نہ ہوجائے اس وقت تک عارضی طور پروزیر اعلی پنجاب اور وزیر قانون کو حکومت سے الگ ہوجانا چاہیے ۔رکاوٹیں ہٹانے کے بہانے کسی تعلیمی مرکز پر چڑھ دوڑنا کسی صورت بھی قابل برداشت نہیں ۔ رکاوٹیں صرف ماڈل ٹاﺅن میں منہاج القرآن کے اردگرد ہی نہیں شہر میں جگہ جگہ بیرئر لگے ہوئے ہیں جن سے شہریوں کو شدید پریشانی اور مشکلات کا سامناہے ۔ ڈیفنس سوسائٹی اور جی او آر میں بھی رکاوٹیں موجود ہیں لیکن حکومت نے فسطائیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایسے موقع پر لاہور کو میدان جنگ بنایا جب ڈاکٹر طاہر القادری اعلان کرچکے ہیں کہ وہ 23 جون کو پاکستان آرہے ہیں ۔

لیاقت بلوچ

مزید :

علاقائی -