ہمیں ٹک کر کام کرنے دیا جائے تو 5 سال میں ملک کی تقدیر بدل دیں گے:وزیراعظم نواز شریف

ہمیں ٹک کر کام کرنے دیا جائے تو 5 سال میں ملک کی تقدیر بدل دیں گے:وزیراعظم نواز ...
ہمیں ٹک کر کام کرنے دیا جائے تو 5 سال میں ملک کی تقدیر بدل دیں گے:وزیراعظم نواز شریف

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ) وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ ہم کام کرنے آئے ہیں ، ٹانگیں نہ کھینچی جائیں اور ٹک کر کام کرنے دیا جائے تو 5 سالوں میں پاکستان کی تقدیر بدل دیں گے۔ وفاقی دارلحکومت میں طلباءو طالبات میں لیپ ٹاپ سکیم کی تقسیم کے لیے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان نے گزشتہ 65 برسوں میں بڑے دکھ اٹھائے ہیں لیکن اگر 5 سال ٹک کر کام کرنے دیا جائے تو اللہ تعالی پاکستان کی تقدیر بدل دیں گے۔ وزیر اعظم نے اپوزیشن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے پچھلے 5 سال بڑی بردباری کے سا تھ گزارے اور صبر کا مظاہرہ کیا، اس دوران نہ ہم سڑکوں پر آئے اور نہ ہی حکومت کے خلاف دھرنے دیئے لیکن اب ایک پارٹی احتجاج، دوسری دھرنے اور تیسری اس نظام لپیٹنے اور تباہی کی بات کرتی ہے۔نواز شریف نے کہا کہ یہ سب کس لئے کیا جارہا ہے؟، حکومت جو کررہی ہے کیا درست نہیں ہے؟۔ حکومت کی جانب سے نوجوانوں کو تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے غریب بچوں کی فیس ادا کی جارہی ہے اور نوجوانوں کو قرضہ فراہم کرنے کا جو سفر شروع کیا وہ بھی بالکل درست چل رہا ہے، بچوں کی فیس واپسی کے ساتھ ساتھ لیپ ٹاپ بھی دیئے جارہے ہیں ، ملک کو اندھیروں سے نکالنے کےلئے بجلی کے پلانٹ لگ رہے ہیں، پاکستان اور چین کے مابین اقتصادی راہداری بن رہی ہے، حکومت ایک سال سے اپنے منشور پر عمل کررہی ہے۔وزیر اعظم کا کہنا تھاکہ پاکستان کی سٹاک مارکیٹ دنیاکی بہترین مارکیٹس میں سے ہے جبکہ دنیا بھی اس بات کا اعتراف کررہی ہے ،سرمایہ کاری کے حوالے سے پاکستان ٹاپ ممالک کی فہرست میں شامل ہے اور اب ملک سے بے روزگاری کا بھی خاتمہ شروع ہوگیا ہے ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ بجٹ میں عوام پر ٹیکسوں کا بوجھ بھی نہیں ڈالا گیا، متوازن بجٹ بنا نے پر وزیر خزانہ اسحق ڈار کو شاباش دیتا ہوں ،گوادر کو سنگا پور اور ہانگ کانگ جیسی بندر گاہ بنائیں گے ،پاکستان کو آگے بڑھنے اور ترقی کی راہ پر گامزن رہنے دیا جائے۔نواز شریف نے کہاکہ پاکستان کو دہشت گردی سے پاک کرنے کے لئے جدوجہد کرکے ایک پرامن ملک بنانے کی کوشش کی جارہی ہے، ہم چاہتے ہیں پاکستان سے غیر قانونی اسلحے کو مکمل طور پر ختم کردیا جائے اور اس پر عمل درآمد کے لئے سخت قوانین لائے جائیں تاکہ بھتہ خوری، ڈکیتیاں، قتل و غارت اور چوری چکاری بند ہو جس کے بعد لاقانونیت پر بھی قابو پالیں گے۔ اس کےلئے سب پارٹیوں کو ذمہ داری کا ثبوت دینا چاہئے۔

مزید :

اسلام آباد -Headlines -