قادیانی ہمسایہ ملک میں پناہ لینے پر مجبور

قادیانی ہمسایہ ملک میں پناہ لینے پر مجبور
قادیانی ہمسایہ ملک میں پناہ لینے پر مجبور
کیپشن: qadyani

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں اقلیتوں کےلئے غیر موزوں حالات کی وجہ سے یہ لوگ پاکستانی شہری ہونے کے باوجود اپنا وطن چھوڑنے پر مجبور ہوجاتے ہیں اور غیر ممالک میں جا کر بھی بدترین حالات سے دوچار رہتے ہیں۔حال ہی میں انکشاف ہوا ہے کہ پاکستان میں حالات سے غیر مطمئن قادیانی چین میں پناہ حاصل کررہے ہیں لیکن سخت کوشش اور تکالیف اٹھا کر چین پہنچنے والے یہ تارکین وطن چین جا کر نئے مسائل کا شکار ہوجاتے ہیں۔ چین میں اس وقت35کے قریب قادیانی موجود ہیں جنہوں نے سیاسی پناہ کے لئے درخواست دے رکھی ہے۔ایک 37سالہ شخص سعید نے بتایا کہ وہ تقریباً تین لاکھ روپے خرچ کرکے چین پہنچا لیکن وہاں بدترین حالات میں زندگی گزارنے پر مجبور ہے ۔ ان لوگوں کو چین پہنچنے پر عارضی طور پر رہنے کی اجازت تو مل جاتی ہے لیکن کام کرنے ،تعلیم حاصل کرنے اور دیگر ضروریات زندگی سے محروم رہنا پڑتا ہے ۔اقوام متحدہ کے رجسٹرڈ پناہ گزینوں کو زندگی کی کچھ سہولیات تو میسر ہوتی ہیں لیکن وہ کئی کئی سال منتظر رہتے ہیں کہ انہیں کسی دوسرے ملک جانے کا موقع مل سکے کیونکہ چین میں ان کا قیام جتنا بھی طویل ہو عارضی نوعیت کا ہی رہتا ہے ۔ تاہم ان لوگوں نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا ہے کہ چین میں ان کی زندگی خطرے میں نہیں ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -