ایف پی سی سی آئی کا ، وزیراعظم سعد ہریری کی دعوت پر لبنان کا کامیاب کاروباری دورہ

ایف پی سی سی آئی کا ، وزیراعظم سعد ہریری کی دعوت پر لبنان کا کامیاب کاروباری ...

کراچی (اے پی پی) لبنان کے وزیر اعظم سعد ہر یر ی کی دعو ت پر فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈ سٹر ی کے نائب صدر عرفان احمد سروانہ کی قیادت میں 27رکنی کاروباری وفد نے لبنان کا کا میاب دورہ کیا۔ پیر کو یہاں جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق دورے کے دوران وفد نے لبنا ن کے سرکاری حکام اور بزنس کمیونیٹی کے نمائند وں کے ساتھ اعلیٰ سطحی ملا قتیں کیں ۔ پاکستانی وفد کے لیڈ ر عرفان احمد سروانہ نے لبنان کی بز نس کمیو نٹی سے خطا ب کر تے ہو ئے کہاکہ پاکستان میں کا روبا ر کے ان گنت مواقع مو جو دہیں ، زراعت ، کھیلوں کا سامان ، کٹلری ، سر جیکل /جراحی اعلا ت اور بہت سے شعبہ جا ت میں پاکستان کا رو بار کے وسیع مواقع مہیا کر تا ہے۔ وفد نے وزیر اعظم لبنان سعد ہر یر ی سے بھی ملا قا ت کی اس ملا قا ت کے دوران سعد ہر یر ی نے کہا کہ لبنان میں سیا حت ملکی جی ڈی پی 10فیصد ہے اور دنیا بھر سے سیا ح لبنان آتے ہیں ۔ اس کے علاوہ لبنان صنعتی ، بینکا ری ، زراعت اور ٹر انسپو رٹ کے سازوسامان کے شعبے جا ت میں سر مایہ کا ری کے روشن مواقع رکھتا ہے۔ دورے کے دوران دو نو ں ممالک کے درمیا ن تجا رتی تعلقا ت کو فر وغ دینے کے مختلف پہلو ؤ ں کا جا ئز ہ لیا گیا ۔ وفد نے لبنان کی وزارت اقتصادیا ت وتجا رت میں محترمہ جیکلو لین ملہبم اور دیگر عہدیداران سے بھی ملا قات کی۔ ملا قات کے دوران تجا رتی وفود کے تبا دلے تجا رتی نما ئشو ں کے انعقاد پر بھی زور دیا گیا ۔ عرفان احمد سروانہ کی سر براہی میں وفد نے مختلف چیمبرز اور ایسو سی ایشنز کے ساتھ بھی ملا قاتیں کیں اور چار مفا ہمتی یا داشتو ں پر بھی دستخط کیئے ۔ عرفان احمد سروانہ نے فر ی ٹر یڈ اور تر جیحی تجا رتی معاہد وں کی اہمیت پر بھی زور دیا ۔ ان کا مز ید کہنا تھا کے پاکستان کی اسلا می ممالک کی تنظیم کو برآمدات صرف 1.6بلین ڈالر ہے جبکہ در آمدات کا حجم تقر یباً5بلین ڈالر ہے۔ اس تجا رتی خصار ے کو بہتر بنا نے کے لیے پاکستان کو چاہیے کہ اس اہم منڈ ی اور اسکے علاوہ مزید غیرروایتی منڈ یو ں پر تو جہ مر کو ز کر ے تاکہ تجا رتی اعداد وشما ر کو بہتر بنا یا جا سکے ۔ بیروت میں پاکستان سفارتخانے نے پاکستانی تجارتی وفد کے اعزاز میں عشائیہ دیا جس میں لبنان کی معروف کا رباری شخصیا ت اعلیٰ سو ل و سرکاری عہدایداران نے بھی شر کت کی۔

مزید : کامرس


loading...