حکمران120ارب کا نندی پور پاور پراجیکٹ نجی شعبے کو دے رہے ہیں،مہرین

حکمران120ارب کا نندی پور پاور پراجیکٹ نجی شعبے کو دے رہے ہیں،مہرین

لاہور(نمائندہ خصوص)سابق وزیر مملکت انصاف و پارلیمانی امور مہرین انور راجہ نے کہا ہے کہ نندی پور پاور پراجیکٹ23ارب سے شروع ہوا اور120ارب تک جا پہنچا اور صرف تین دن چل سکا اور اب اسے نجی شعبے کے حوالے کیا جا رہا ہے، پنجاب حکومت کے تمام پاور پراجیکٹ ناکام ہوگئے ، اب یہ پراجیکٹ پرائیویٹ کئے جارہے ہیں، ان پاور پراجیکٹس میں کرپشن کہائی الگ ہے جب ذمہ داروں کو تحقیقات کا خدشہ لاحق ہوا تو ’’ نا معلوم افراد ‘‘ نے اس کا ریکارڈ پھاڑ دیا جاتا ہے ن لیگ میں اہم پراجیکٹ کاریکارڈ ضائع کرنا معمول ہے، اس شعبہ میں نہ صرف پنجاب بلکہ وفاقی حکومت بھی ناکام رہی۔ قادرپور کول پراجیکٹ بھی فلاپ رہا ماہرین پہلے ہی کہہ چکے تھے کہ یہ پراجیکٹ چل ہی نہیں سکتا،چیچوں کی ملیاں پاور پلانٹ تین ارب لگنے کے بعد بند ہو گیا،گڈانی پاور پراجیکٹ بھی فلاپ رہا جبکہ ستم یہ بھی ہے کہ اس کی صرف فزیبلٹی رپورٹ اور افتتاح پر کروڑوں روپے لگائے گئے اور پھر اسے بند کر دیا گیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...