حویلی بہادر شاہ پلانٹ سے ایک ہفتے کے اندر750میگا واٹ بجلی کی پیدا وار شروع ہو جائیگی :شہباز شریف

حویلی بہادر شاہ پلانٹ سے ایک ہفتے کے اندر750میگا واٹ بجلی کی پیدا وار شروع ہو ...

لاہور(سٹی رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے ضلع جھنگ کے علاقے حویلی بہادر شاہ میں 1230میگاواٹ کے گیس پاور پلانٹ کا تفصیلی دورہ کیااوروزیراعلیٰ نے پلانٹ کے ایک ایک حصے کا معائنہ کیا۔وزیراعلیٰ کنٹرول روم سمیت پلانٹ کے مختلف حصوں میں گئے۔وزیراعلیٰ نے منصوبے پرکام کی رفتارپر اطمینان اورتسلی کا اظہار کیا ۔ وزیراعلیٰ نے منصوبے پر کام کرنیوالے انجینئرز اورورکرزسے ملاقاتیں کیں۔ وزیراعلیٰ شہبازشریف نے انجینئرز اور ورکرز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آپ ایک قومی منصوبے پر کام کرکے قومی خدمت کررہے ہیں اورآپ کایہ کردارہمیشہ تاریخ میں یا د رکھا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ لوڈشیڈنگ کے اندھیرے دور کرنے میں سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے اوراس پلانٹ سے ایک ہفتے کے اندر 750میگاواٹ بجلی کی پیداوار شروع ہوجائے گی جو نیشنل گرڈ میں شامل ہوگی اوراس سے لوڈ شیڈنگ میں نمایاں کمی ہوں گی۔انہوں نے کہاکہ انشاء اللہ آج رات سے حویلی بہادر شاہ کے پلانٹ سے بجلی کی آزمائشی پیداوارکا آغاز ہورہا ہے اوراس اہم منصوبے کی پہلی ٹربائن سے بجلی کی آزمائشی پیداوار کا آغاز ہوگا۔وزیراعظم محمد نوازشریف کی قیادت میں پاکستان مسلم لیگ(ن) کی حکومت کی لوڈ شیڈنگ کے اندھیروں پر قابو پانے کیلئے مخلصانہ کاوشیں رنگ لارہی ہے ۔ وزیراعلیٰ شہبازشریف نے حویلی بہادر شاہ گیس پاور پلانٹ کے دورے کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اندھیروں کیساتھ ساتھ اندھیروں کے حامیوں سے بھی جنگ لڑنی پڑ رہی ہے اور اللہ کے فضل وکرم اورعوام کی حمایت سے دونوں محاذوں پر سرخرو ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ ترقی کے سفر میں ہماری ناکامی کے خواہش مند دراصل عوام کو ناکام دیکھنا چاہتے ہیں لیکن پاکستان کے باشعور عوام ایسا کبھی نہیں ہونے دیں گے ۔انہوں نے کہا کہ توانائی کی پیداوار میں گزشتہ چار برسوں میں جو نمایاں پیش رفت ہوئی ہے، اسکی پاکستان کی 70سالہ تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ صنعتوں کی طرح گھریلو صارفین کو مطلوبہ بجلی فراہم کرکے دم لیں گے۔انہوں نے کہا کہ سخت گرمی میں محنت کا مظاہرہ کرنیوالے ملکی و غیر ملکی ماہرین اور محنت کشوں کی ہمت کو سلام کرتا ہوں جو نہایت عزم اورجذبے کے ساتھ اس اہم منصوبے پر دن رات کام کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہپنجاب میں مسلم لیگ(ن) کی حکومت ترقی اورمخالفین دروغ گوئی اور الزام تراشی کے نئے ریکارڈ قائم کررہے ہیں ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ اس منصوبے پر 90 ارب روپے لاگت آئے گی۔

شہباز شریف

لاہور(سٹی رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیر صدارت اعلی سطح کااجلاس منعقد ہوا ،جس میں شعبہ صحت میں اصلاحات اور عوام کو معیاری طبی سہولتوں کی فراہمی کے جاری پروگرام پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا۔وزیراعلی محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پنجاب حکومت نے صوبے میں ہر سطح پر میرٹ کو فروغ دیاہے ۔پرائیویٹ میڈیکل کالجوں میں بھی داخلے کے حوالے سے میرٹ پالیسی پر عمل کرنا ہوگا۔میں نے آج تک میرٹ پالیسی کی خلاف ورزی کی ہے او رنہ کسی کو کرنے دی ہے۔میڈیکل کے شعبہ میں معیار کو بہتر بنانے کے لئے میرٹ ہی واحد راستہ ہے ۔انہوں نے کہاکہ پرائیویٹ میڈیکل کالجوں کو ریگولیٹ کرنے کے لئے باہمی مشاورت سے اقدامات تجویز کئے جائیں اورانہیں ریگولیٹ کرنے کے حوالے سے مناسب لائحہ عمل طے کیاجائے۔وزیراعلی نے ہدایت کی کہ پرائیویٹ میڈیکل کالجو ں کی انسپکشن تھرڈ پارٹی کے ذریعے کرائی جائے۔انہوں نے کہاکہ ہم نے سب سے پہلے اپنا قبلہ درست کرنا ہے۔متعلقہ ادارے او رمحکمے مکمل بااختیار ہیں اور انہیں ا پنے فرائض تندہی سے ادا کرنا ہیں اور مسائل حل کرنے کے لئے ان کی جانب سے موثر اقدامات کا خیر مقدم کیا جائے گا۔انہوں نے کہاکہ طبی شعبہ میں ایم فل اور پی ایچ ڈی کی کمی دور کرنے کے لئے خصوصی مراعاتی پیکیج دیا جائے گا اور اس ضمن میں محکمہ صحت پیش کردہ تجاویز پر عملدرآمد یقینی بنائے۔انہوں نے کہاکہ میڈیکل ایجوکیشن کو بہتر بنانے کے لئے ہر ضروری اقدام اٹھایا جائے گا۔ ہم نے ذمہ داری نبھانی ہے اور عوام کو جواب دینا ہے۔وزیراعلی نے کہاکہ پنجاب حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں شعبہ صحت کے لئے ریکارڈ فنڈز مختص کئے ہیں۔صحت عامہ کی سہولتوں کی بہتری کے لئے ہر طرح کے وسائل دوں گا۔اپنا پیٹ کاٹ کر بھی فنڈز فراہم کریں گے تاہم اس ضمن میں مطلوبہ نتائج کا حصول یقینی بنانا ہوگا اور صحت عامہ کی سہولتوں کے لئے مختص کردہ وسائل کی ایک ایک پائی کا فائدہ عام آدمی کو پہنچنا چاہیے۔انہوں نے کہاکہ میڈیکل کے امتحانات کے نظام کو مزید بہتر بنانے کے لئے سفارشات پیش کی جائیں اور اس ضمن میں وزیراعلی نے کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی ہے۔انہوں نے کہاکہ دکھی انسانیت کی خدمت میں جو سکون ملتا ہے اسے الفاظ میں بیان نہیں کیا جاسکتا،اس لئے متعلقہ ادارے او رشعبہ طب سے وابستہ افراد محنت اور جذبے کے ساتھ دکھی انسانیت کی خدمت کریں۔انہوں نے کہاکہ وائرل امراض کی روک تھام کے لئے محکمہ پرائمری وسیکنڈری ہیلتھ نے شاندار پلان پیش کیا ہے اور اس پلان پر عملدرآمد ہر صورت یقینی بنایا جائے۔وائرل امراض کی روک تھام کے حوالے سے انسداد ڈینگی کے ماڈل سے فائدہ ا ٹھایا جائے۔صوبائی وزراء خواجہ سلمان رفیق، خواجہ عمران نذیر،ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، مشیر ڈاکٹر عمر سیف ، ایم پی اے مختار احمد بھرت،چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، طبی ماہرین اور متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز نے اجلاس میں شرکت کی جبکہ چیف سیکرٹری ویڈیولنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔

مزید : صفحہ اول


loading...