نیب لاہو کا ’’مگر مچھوں‘‘ کیخلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ، حکمت عملی مرتب

نیب لاہو کا ’’مگر مچھوں‘‘ کیخلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ، حکمت عملی مرتب

لاہور(لیاقت کھرل) قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور نے 350زیر تفتیش کیسوں میں سے 98کیسوں کو میگا سکینڈل کا درجہ دیدیا۔ زیر تفتیش کیسوں کا دائرہ کار وسیع، عید الفطر کے بعد بڑے بڑے مگرمچھوں کیخلاف کریک ڈاؤن، گرفتاریوں کیلئے منصوبہ بندی اور حکمت عملی کو حتمی شکل دیدی۔ نیب ذرائع کے مطابق زیرتفتیش کیسز میں50سے زائد بیورو کریٹس، 20محکموں کے 50 سے زائد ٹھیکیدار، بینک افسروں سمیت نجی ہاؤسنگ سکیموں اور پرائیویٹ کمپنیوں کے330سے زائد چیف ایگزیکٹوز، ڈائریکٹرز اور محکمہ مال کے افسران اور پٹواری بھی شامل ہیں جبکہ محکمہ پی ڈبلیو ڈی کے گرفتار اعلیٰ افسروں اور 20کیسوں میں گرفتار ملزموں سمیت دوسرے زیر تفتیش 98کیسوں کو میگا سکینڈل کا درجہ دیاگیا ۔نیب لاہور کے نئے ڈی جی شہزاد سلیم کے حکم پر نیب کے آپریشن ونگ اور انویسٹی گیشن سمیت ویجیلنس سیل نے منصوبہ بندی کو حتمی شکل دے دی جس کے تحت سی سی پی او لاہور سمیت تمام اضلاع کے ڈی پی اوز کی بھی مدد حاصل کرنے کیساتھ ساتھ مطلوب ملزموں کے نام بھی ای سی ایل میں ڈالنے کی کارروائی تیز کر دی گئی۔ نیب کے ترجمان کے مطابق لاہور کے نئے ڈی جی کے حکم پر کرپٹ عناصر کیخلاف کارروائیوں کو تیز کیا جا رہا ہے جن کی تحقیقات اور تفتیش کیلئے دائرہ کار وسیع کر دیا گیا اور عید الفطر کے بعد بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن کیا جائے گا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...