فلپس کا ماحولیاتی تبدیلی کے حوالے سے پروگراموں کا آغاز

فلپس کا ماحولیاتی تبدیلی کے حوالے سے پروگراموں کا آغاز

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پاکستان: بجلی کی مصنوعات میں عالمی شہرت یافتہ فلپس لائٹنگ (یورو نیکسٹ ایمسٹرڈم ٹکر: LIGHT) نے پاکستان میں اسکول کے بچوں میں توانائی کے مؤثر استعمال اور ماحولیاتی تبدیلی کے حوالے سے آگاہی پیدا کرنے کے لیے مؤثر پروگرامات کا آغاز کیا ہے۔ شہری آبادی میں بڑھتے ہوئے اضافے نے بجلی سمیت توانائی کی مجموعی طلب میں اضافہ کیا ہے جو دنیا کی 15 فیصد توانائی کے استعمال میں حصہ دار ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اس وقت مؤثر طریقے سے توانائی کے استعمال اور ماحول پر اس کے مثبت اثرات کے حوالے سے آگاہی پیدا کرنے کی فوری ضرورت ہے۔اس پروگرام کے تحت فلپس لائٹنگ مقامی اسکولوں میں مختلف عمر کے اسکول کے بچوں کے لیے interactive ورکشاپس منعقد کروا رہا ہے۔ ان ورکشاپس میں باہم متعامل اور مصروف رکھنے والے سیشن شامل ہوں گے تاکہ طلبا دوسرے موضوعات کے ساتھ ماحولیاتی تبدیلی، پائیداری اور توانائی کے مؤثر استعمال جیسے موضوعات کو سمجھ سکیں۔ اس اقدام کے طور پر فلپس لائٹنگ ایک مقامی اسکول میں ایک ورکشاپ کا پہلے ہی انعقاد کر چکا ہے جس میں 150 سے زائد بچوں تک رسائی کی گئی۔فلپس پاکستان کے چیف ایگزیکٹو آفیسر اسد جعفر نے کہا کہ فلپس پاکستان کی ماحول سے وابستگی کی تاریخ کافی پرانی ہے۔ ہم بجلی کے متعلق اپنی مہارت اور علم کو انہی برادریوں تک لوٹانا چاہتے ہیں جہاں ہم اپنا کام کرتے ہیں۔ ہم اسکول کے بچوں میں توانائی کے مؤثر استعمال اور ماحول دوستی کے حوالے سے آگاہی پیدا کرنے کے لیے مقامی اسکولوں کے ساتھ تعاون کرنے پر نہایت پُر جوش ہیں۔ صاف توانائی کو بروئے کار لا کر ہم زیادہ سے زیادہ منصفانہ سماجی اور معاشی ترقی کو پروان چڑھا سکتے ہیں۔ اب وقت ہے کچھ کرگزرنے کا۔ اس منفرد اقدام کے ذریعے ہم بچوں کو ابتدائی عمر ہی سے ماحول کے حوالے سے ذمہ دار بنانے کی ضرورت کے متعلق تعلیم دے رہے ہیں۔آبادی میں بڑھتے ہوئے اضافے اور شہری آبادی میں اضافے کی وجہ سے دنیا بھر میں توانائی کی طلب میں نمایاں طور پر اضافہ ہوا ہے۔ 2050 تک دنیا کی آبادی کا دو تہائی حصہ شہروں رہائش اختیار کر لے گا جہاں بجلی کی طلب سب سے زیادہ ہے۔ ایک اندازے کے مطابق دنیا بھر میں بڑھتی ہوئی آبادی کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے لائٹ پوائنٹس کی تعداد میں 35 فیصد تک اضافہ ہوگا۔ اس وجہ سے ماحول کو فائدہ پہنچانے کے لیے توانائی کے مؤثر استعمال کے ذریعے بڑی تعداد میں توانائی کی بچت کی جا سکتی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...