تورا بورا کا علاقہ داعش سے واپس لے لیا، افغان حکام کا دعویٰ

تورا بورا کا علاقہ داعش سے واپس لے لیا، افغان حکام کا دعویٰ
تورا بورا کا علاقہ داعش سے واپس لے لیا، افغان حکام کا دعویٰ

  


کابل( آن لائن ) افغان حکام نے تصدیق کی ہے کہ ملکی سکیورٹی فورسز نے اہم اسٹرٹیجک علاقے تورا بورا کو داعش کے جنگجو ﺅں سے واپس حاصل کر لیا ہے۔ننگرہار کے گورنر کے دفتر کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ تورا بورا کے علاقے کو مکمل طور پر داعش کے قبضے سے آزاد کرا لیا گیا ہے۔ دریں اثنا صوبہ نمروز میں ایک ضلعی سربراہ آقا محمد فضلی کو قتل کر دیا گیا ہے۔صوبہ نمروز کے حکام نے بتایا کہ آقا محمد فضلی کو اس وقت ہلاک کیا گیا جب وہ اپنے دفتر جا رہے تھے، ان پر موٹر سائیکل پر سوار نامعلوم افراد نے فائرنگ کی، ضلعی سربراہ ہونے کے ساتھ ساتھ وہ ایک اہم قبائلی سردار بھی تھے، ابھی تک کسی بھی تنظیم کی جانب سے اس قتل کی ذمے داری قبول نہیں کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ داعش نے صوبہ ننگرہار میں اپنے حریف گروہ طالبان سے شدید لڑائی کے بعد تورا بورا کے علاقے پر 5 روز قبل قبضہ کر لیا تھا، سرنگوں اور غاروں پر مشتمل تورا بورا کا پہاڑی علاقہ کبھی القاعدہ کے سربراہ اسامہ بن لادن کا محفوظ ٹھکانہ رہا ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...