وزیرآباد: غریب لڑکی کو شادی کا جھانسہ دے کر بدکاری کرانےکا سکینڈل

وزیرآباد: غریب لڑکی کو شادی کا جھانسہ دے کر بدکاری کرانےکا سکینڈل
وزیرآباد: غریب لڑکی کو شادی کا جھانسہ دے کر بدکاری کرانےکا سکینڈل

  


گوجرانوالہ(ویب ڈیسک) وزیرآباد میں غریب گھرانوں کی لڑکیوں کو شادی کا جھانسہ دے کر بدکاری کرانے کا ایک لرزہ خیز سکینڈل سامنے آ یاہے، دو ملزموں سے غیر اخلاقی فلموں پر مشتمل یو ایس بیز اور دیگر مواد برآمد کر لیا گیا، دونوں ملزموں طارق عظیم اور ثمرہ عرف لبنیٰ کو 14 روز جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوادیا گیا ، تیسرے ملزم قاسم کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ تھانہ سٹی وزیرآباد میں درج مقدمہ میں پولیس نے متاثرہ لڑکیوں کے بیانات کی روشنی میں تفتیش کو وسیع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

نجی اخبار روزنامہ دنیا کے مطابق تفتیشی افسر سب انسپکٹر محمد افضل نے بتایا کہ تاجروں سمیت ان شہریوں کو بھی شامل تفتیش کیا جائے گا جن کے ناموں کا انکشاف لڑکیوں نے سپیشل جوڈیشل مجسٹریٹ کو دیئے گئے بیانات میں کیا ہے۔ اخبار نے متاثرہ لڑکیوں کے مجسٹریٹ کے روبرو سیکشن 164 ض ف کے بیانات کی تفصیلات حاصل کر لیں، بدکاری کرنیوالوں میں وکلا، تاجر، صراف اور سرمایہ کاروں سمیت دیگر افراد بھی شامل ہیں۔ انکار پر لڑکیوں کے جسموں پر سلگتے سگریٹ لگائے جاتے جبکہ ملزمہ ثمرہ ناخن مارنے کے بعد زخموں پر نمک چھڑکتی تھی۔ دو متاثرہ لڑکیوں کے مطابق جسم فروشی کا دھندا کروانے والوں نے شادی کا جھانسہ دے کر وزیر آباد سمیت کئی شہروں لڑکیوں میں لڑکیوں کا مستقبل تباہ کر دیا۔ ڈسکہ روڈ کی رہائشی 21سالہ (آ) نے بتایا کہ چار سال قبل طارق عظیم اور لبنیٰ کے کہنے پر والدہ نے اس کا نکاح طارق کے چھوٹے بھائی مدثر سے کیا، شادی کے تیسرے روز طارق اور لبنیٰ نے اسے کمرہ میں بند کر کے زبردستی شراب پلائی اور گھناﺅنی ویڈیو بنائی جس کے بعد اسے بلیک میل کیا جاتا رہا، اسے روزانہ مختلف لوگوں کے ہاتھوں فروخت کیا جاتا اور انکار پر اس کے جسم پر سلگتے سگریٹ لگائے جاتے جبکہ ملزمہ ثمرہ اسے ناخن مار کر زخمی کرتی اور زخموں پر نمک چھڑکتی تھی، ظلم و ستم سے تنگ آکر اس نے بھاگنے کی کوشش کی تو ملزموں نے اسے تیسری منزل سے نیچے گرادیا جس کی وجہ سے اس کی ٹانگ بھی ٹوٹ گئی۔ ایک اور متاثرہ لڑکی (ت) نے بھی مجسٹریٹ کے روبرو بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے بتایا کہ باپ کے انتقال کے بعد اس کی والدہ نے دوسری شادی کر لی اور اسے سارو کی کی رہائشی مسرت کے گھر میں کام کاج پر لگا دیا، مسرت نے اسے وزیر آباد میں ایک شخص سہیل کے گھر بھیج دیا جہاں اس سے زیادتی کی گئی ، وہاں سے ملزم طارق عظیم اسے بیٹی بنا کر چیمہ کالونی لایا اور اپنے بھائی قاسم کے ساتھ نکاھ کروا دیا جس کے بعد اسے جسم فروشی پر لگادیا گیا، دونوں لڑکیوں نے مجسٹریٹ کو ریکارڈ کروائے گئے بیانات میں بتایا کہ ملزموں نے وزیر آباد سمیت گردونواح کی کئی لڑکیوں کا مستقبل تباہ کر دیا ہے ۔

مزید : گوجرانوالہ


loading...