خود ساختہ حکومتی ترجمانوں سے کہیں ناپ تول کر بولا کریں: جسٹس اعجاز الاحسن کا اٹارنی جنرل سے مکالمہ

خود ساختہ حکومتی ترجمانوں سے کہیں ناپ تول کر بولا کریں: جسٹس اعجاز الاحسن کا ...
خود ساختہ حکومتی ترجمانوں سے کہیں ناپ تول کر بولا کریں: جسٹس اعجاز الاحسن کا اٹارنی جنرل سے مکالمہ

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) جسٹس اعجاز الاحسن نے اٹارنی جنرل کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ خود ساختہ حکومتی ترجمانوں کو کہیں ناپ تول کر بولا کریں ۔صرف میڈیا کو الزام نہیں دیا جا سکتا۔”آرٹیکلز اور سیاستدانوں کے بیانات ہمارے ذہن تبدیل نہیں کر سکتے“۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق جے آئی ٹی میں پیشی کے دوران حسین نواز کی تصویر لیک ہونے کے بعد دائر درخواست پر فیصلہ سنانے والے تین رکنی خصوصی بینچ کے رکن جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیے ہیں کہ یہ کیس ذمہ داری کا معاملہ ہے ۔ اخبار پڑھ کر لگتا ہے اٹارنی جنرل کی ضرورت نہیں ۔ کیس کو میڈیا ٹرائل نہ بنایا جائے ۔کوئی عدالت کو ڈی ریل کرنے کا سوچے بھی نہ۔

یہ بھی پڑھیں، سپریم کورٹ نے حسین نواز کی درخواست مسترد کر دی

انہوں نے مزید ریمارکس دیے کہ یہ کیس ذمہ داری کا معاملہ ہے،خود ساختہ حکومتی ترجمانوں کو کہیں ناپ تول کر بولا کریں۔جسٹس عظمت سعید شیخ نے ریمارکس دیے کہ ہم یہاں نابالغ تو نہیں بیٹھے ہوئے جو معاملے کو سمجھ نہ سکیں ۔

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...