چاہے آپ کے پاس جتنی بھی بڑی گاڑی ہو، جب آپ دبئی کی اس ٹیکسی سروس کے بارے میں سنیں گے تو آپ کا بھی دل چاہے گا کہ اسی میں جاﺅں

چاہے آپ کے پاس جتنی بھی بڑی گاڑی ہو، جب آپ دبئی کی اس ٹیکسی سروس کے بارے میں ...
چاہے آپ کے پاس جتنی بھی بڑی گاڑی ہو، جب آپ دبئی کی اس ٹیکسی سروس کے بارے میں سنیں گے تو آپ کا بھی دل چاہے گا کہ اسی میں جاﺅں

  


دبئی سٹی(مانیٹرنگ ڈیسک) سال رواں کے آغاز میں دبئی کے حکام نے اڑنے والی ٹیکسی کے منصوبے کا اعلان کیا تو دنیا حیران رہ گئی اوربہت سے لوگوں کو تو اب تک اس بات پر یقین نہیں آیا تھا، مگر اب سب کو یقین کرنا ہی پڑے گا کیونکہ اسی سال کے آخر تک اُڑن ٹیکسیاں دبئی کی فضاﺅں میں اڑتی نظر آئیں گی۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ’آٹونمس ائیرٹیکسی AAT‘نامی اڑنے والی ٹیکسی کی رفتار 50 کلومیٹر فی گھنٹہ سے 100 کلومیٹر فی گھنٹہ کے درمیان ہوگی اور اس سال کی آخری سہ ماہی میں اس کی آزمائشی پروازوں کا آغاز ہوجائے گا۔ اڑنے والی ٹیکسی کی ایک اور انفرادیت یہ ہوگی کہ اسے اڑانے کیلئے کسی ڈرائیور یا پائلٹ کی ضرورت نہیں ہوگی بلکہ ایک خود کار کمپیوٹر کے ذریعے یہ مسافروں کو ان کی منزل تک پہنچائے گی۔

مسلم دنیا کا وہ حکمران جس کی اس ایک گاڑی کی قیمت ایک ارب 40 کروڑ روپے ہے، یہ کس ملک کا سربراہ ہے؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کردے گا

دبئی کی روڈز اینڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی نے جرمن کمپنی وولوکاپٹر کے ساتھ ٹیکسیوں کی تیاری کیلئے معاہدہ بھی کرلیا ہے۔ یہ کمپنی اڑنے والی خود کار مشینیں بنانے میں مہارت رکھتی ہے اور دبئی میں متعارف کروائی جانے والی اس کی تیار کردہ ٹیکسی میں دو مسافروں کی گنجائش ہوگی۔ یہ ٹیکسی تقریباً چھ فٹ لمبی اور 7 فٹ چوری ہوگی اور اسے 9عدد کوئیک چارج پلگ ان بیٹریاں برقی طاقت فراہم کریں گی۔ ٹیکسی کی پروازکا زیادہ سے زیادہ وقت نصف گھنٹہ ہوگا جبکہ اس کی بیٹری کو چارج ہونے کیلئے 40 منٹ درکار ہوں گے۔ ٹیکسی کو اڑانے کیلئے اس کے اوپر 18 پنکھے لگائے جائیں گے۔ پنکھوں کی بڑی تعداد حفاظتی نقطہ نظر سے رکھی گئی ہے تاکہ ان میں سے کسی ایک کے ناکام ہونے کی صورت میں حادثے کا خطرہ نہ ہو۔ احتیاط کے طور پر ٹیکسی میں پیراشوٹ بھی فراہم کیا جائے گا۔

مسافر ٹیکسی کے کمپیوٹر میں اپنی منزل کا نام درج کریں گے تو اس کا آٹو پائلٹ سسٹم انہیں خود کار طریقے سے اُڑا کر ان کی منزل تک لیجائے گا۔ اُڑنے والی ٹیکسی کی پہلی اُڑان کے ساتھ ہی دبئی ایک اور عالمی ریکارڈ قائم کردے گا کیونکہ یہ دنیا کا پہلا شہر ہوگا جہاں یہ منفرد ترین سروس فراہم کی جائے گی۔

مزید : عرب دنیا


loading...