خفیہ کمرے سے ہٹلر کے متعلق نایاب نوادرات ایسے ملک سے مل گئیں جس کا آپ نے سوچا بھی نہ ہوگا، کہا جاتا ہے کہ ہٹلر آج تک اس ملک میں زندہ ہے

خفیہ کمرے سے ہٹلر کے متعلق نایاب نوادرات ایسے ملک سے مل گئیں جس کا آپ نے سوچا ...
خفیہ کمرے سے ہٹلر کے متعلق نایاب نوادرات ایسے ملک سے مل گئیں جس کا آپ نے سوچا بھی نہ ہوگا، کہا جاتا ہے کہ ہٹلر آج تک اس ملک میں زندہ ہے

  


بیونس آئرس (نیوز ڈیسک) مشہور زمانہ ڈکٹیٹر ایڈولف ہٹلر سے متعلقہ تاریخی اشیاءجرمنی میں تو دریافت ہوتی رہتی تھیں لیکن پہلی بار ارجنٹینا میں ہٹلر سے وابستہ تاریخی اشیاءکا بہت بڑا خزانہ دریافت ہوگیا ہے۔

ABC نیوز کی رپورٹ کے مطابق ارجنٹینا کے دارالحکومت کے قریب ایک گھر سے نازی جرمنی دور کے نوادرات کی بڑی تعداد دریافت ہوئی ہے جن میں ہٹلر کا ایک مجسمہ، شاندار ڈبوں میں محفوظ کئے گئے چشمے، نازی جرمنی افواج کے نشان سواستیکا اور ایک طبی آلہ بھی برآمد ہوا ہے جسے لوگوں کے سروں کی جسامت ماپنے کیلئے استعمال کیا جاتا تھا۔

دنیا کا واحد ایئرپورٹ جو بیک وقت 3 ممالک میں واقع ہے ، کیا آپ کو اس کے بارے میں معلوم ہے؟

یہ اشیاءبیونس آئرس کے نواحی علاقے بکار کے ایک گھر سے دریافت ہوئی ہیں جن کی مجموعی تعداد 75بتائی گئی ہے۔ ارجنٹینا کے حکام کا کہنا ہے کہ یہ تمام اشیاءاصلی ہیں اور ان کا تعلق نازی جرمنی دور کے اعلیٰ ترین حکام سے ہے۔ یہ دریافت ان تحقیقات کے نتیجے میں ہوئی ہے جو بیونس آئرس کی ایک آرٹ گیلری میں غیر قانونی فن پاروں کے انکشاف کے بعد شروع کی گئی تھی۔ انٹرپول کی مدد سے اس شخص کی تلاش شروع کی گئی جس کے ذریعے غیر قانونی فن پارے آرٹ گیلری میں پہنچے تھے اور بالآخر 8 جون کے روز پولیس دارالحکومت کے نواح میں اس گھر تک پہنچ گئی جہاں ڈھیروں تاریخی نوادرات غیر قانونی طور پر رکھے گئے تھے، جن میں ہٹلر دور کے نوادرات بھی شامل تھے۔

گھر کے ایک کمرے میں کتابوں کی بڑی الماری کے پیچھے ایک خفیہ دروازہ تھاجسے کھولنے پر ایک اور کمرے کا راستہ ملا، جس میں یہ تمام تاریخی نوادرات چھپائے گئے تھے۔ پولیس نوادرات جمع کرنے والے شخص تک بھی پہنچ گئی ہے تاہم اس کا نام ظاہر نہیں کیا گیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...