جاپان میں افرادی قوت کی کمی‘ غیرملکی کارکنوں کو قبول کرنیکا منصوبہ

جاپان میں افرادی قوت کی کمی‘ غیرملکی کارکنوں کو قبول کرنیکا منصوبہ

ٹوکیو (یو این پی)جاپانی حکومت مزید غیرملکی ملازمین کو قبول کرنے کے لئے ملکی امیگریشن قوانین میں تبدیلی کا ارادہ رکھتی ہے۔یہ اقدام افرادی قوت کی شدید کمی کے تناظر میں کیا جا رہا ہے۔کابینہ کی منظور کردہ بنیادی اقتصادی اور مالی پالیسیوں میں اس سے متعلق تجویز شامل ہے۔ منصوبے کے تحت مخصوص اہلیت کے حامل غیر جاپانیوں کو 5 سال تک جاپان میں رہائش کا نئی قسم کا ویزا دیا جا سکے گا تاکہ وہ مخصوص صنعتوں میں کام کر سکیں۔حکومت ان پانچ شعبوں میں افرادی قوت کو تقویت دینا چاہ رہی ہے جو کام کرنے والوں کی کمی کے سبب سب سے زیادہ متاثر ہیں۔ یہ شعبے ، تعمیرات، شپ بلڈنگ، رہائش، زراعت اور نرسنگ ہیں۔ماہی گیری، تھوک فروشی اور مصنوعات سازی کی صنعتوں کا کہنا ہے کہ وہ بھی مزید غیرملکی کارکن ملازم رکھنے کی امید رکھتے ہیں۔تاہم نقادوں کا کہنا ہے کہ یہ اقدامات عملی طور پر تارکینِ وطن کو قبول کرنے کے مترادف ہیں اور ان سے ملک کی اندرونی سلامتی اور روزگار کو خطرہ لاحق ہو سکتا ہے۔

مزید : کامرس


loading...