خیبر ایجنسی ، فاٹا انضمام کیخلاف سلطان خیل میں احتجاجی مظاہرہ

خیبر ایجنسی ، فاٹا انضمام کیخلاف سلطان خیل میں احتجاجی مظاہرہ

خیبر ایجنسی (بیورورپورٹ)فاٹا انضمام کے خلاف خیبر سلطان خیل میں پاک افغان شاہراہ پر احتجاجی مظاہراہ ہوا جس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی مظاہرین نے انضمام کے خلاف نعرے لگائے اور سیاہ جھنڈے اٹھا رکھے تھے چند افراد ایک کروڑ قبائل کے فیصلہ کے حق نہیں رکھتا مفتی سعید۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے محمدآیاز ،مفتی سعید،حق نواز و دیگر نے کہا کہ اوپر سے مسلط شدہ فیصلہ قبائلی عوام کو ہر گز منظور نہیں فاٹا انضمام سے 28ہزار خاصہ دار فورس کے جوان کا روزگار ختم ہونے کا خدشہ متبادل روزگار دینے کے لئے حکومت کیساتھ کوئی طریقہ کار نہیں انہوں نے پویس نظام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ہم محب الوطن اور پرامن قبائل ہے ہم ملک پاکستان کے دفاع کے لئے بے تنخواہ فوج ہے انہوں نے کہا کہ اپر سے مسط شدہ فیصلہ قبائل ہر گز نہیں مانتے نہ ماننے لے لئے تیار ہے انہوں نے فاٹا انضمام قبائل کے خلاف ایک سازش قرار پایا لیکن اس سازش کو کامیاب نہیں ہونے دینگے مظاہرین نے مزید کہا کہ فاٹا میں بنیادی سہولیات نہ ہونے کے برابر ہے لھذا انسانی و بنیادی حقوق دیا جائے انہوں نے کہا کہ فاٹا ضم ہونے سے قبائلی طلباء کا کوٹہ ختم ہوگا جس سے قبائل طلباء کو بے انتہاء دشواری کا سامناکرنا پڑے گا انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام کو روزگار کے مواقع دیا جائے ضم ہونے سے قبائل کو کوئی پیدا نہیں مزید تاریکیوں کے دلدل میں دھکیلاجارہاہے انہوں نے کہاکہ قبائل عوام فاٹا انضمام کو مسترد کرتے ہے ماہ صیام اورعید کے دنوں میں پانی کی قلت ،صحت کے مراکز میں سہولیات کی فقدان مسائل پر حکومت کی خاموشی اور فاٹا انضمام میں اتنی جلدی سے یہ ثابت ہورہا ہے کہ یہ فیصلہ غیروں کے اشاروں پر ہوا ہے۔ فاٹا انضما کے کے خلاف منقعدہ مظاہرے کے موقع پر سابق ایم این اے شاہ جی گل افریدی کے خلاف شدید نعرہ بازی کی مظاہرین نے خیبر تکیہ سے لیکر سلطان خیل مارکیٹ تک پید مارچ کیا اور گو انضمام گو کے نعرے لگا دئے گئے

مزید : علاقائی


loading...