خواجہ حارث نے نوازشریف کی حالت کو پرانی گاڑی سے تشبیہ دے دی

خواجہ حارث نے نوازشریف کی حالت کو پرانی گاڑی سے تشبیہ دے دی
خواجہ حارث نے نوازشریف کی حالت کو پرانی گاڑی سے تشبیہ دے دی

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آبادہائیکورٹ العزیزیہ ریفرنس میں طبی بنیادوں پر درخواست ضمانت پرسماعت کے دوران خواجہ حارث نے نوازشریف کی حالت کو پرانی گاڑی سے تشبیہ دے دی،وکیل خواجہ حارث نے کہا کہ نوازشریف کی حالت ایسی ہے جیسے پرانی گاڑی جب ورکشاپ جاتی ہے تو ہر چیز کھل جاتی ہے ،اس پر جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ کوئی ایسا علاج نہیں جس سے دوبارہ جوان ہو جائے ،جسٹس محسن اختر کیانی کے ریمارکس پر عدالت میں قہقہے لگ گئے۔

تفصیلات کے مطابق نوازشریف کی طبی بنیادوں پر درخواست ضمانت پر سماعت جاری ہے،نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث درخواست ضمانت پر دلائل دے رہے ہیں ،دلائل دیتے ہوئے خواجہ حارث نے نوازشریف کی حالت کو پرانی گاڑی سے تشبیہ دے دی،خواجہ حارث نے کہا کہ نوازشریف کی حالت ایسی ہے جیسے پرانی گاڑی جب ورکشاپ جاتی ہے تو ہر چیز کھل جاتی ہے ،اس پر جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ کوئی ایسا علاج نہیں جس سے دوبارہ جوان ہو جائے ،جسٹس محسن اختر کیانی کے ریمارکس پر عدالت میں قہقہے لگ گئے۔

خواجہ حارث نے کہا کہ جتنی جدید ٹیکنالوجی آگئی ممکن ہے بھی اور نہیں بھی ،جسٹس عامر فاروق نے استفسار کیا کہ اس سے پہلے بھی والے کیس سے یہ مختلف ہے ،خواجہ حارث نے کہاکہ پہلی درخواست میں زندگی کیلئے خطرہ والی رپورٹس نہیں تھی ،جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ تجاویز تو غیر ملکی ڈاکٹرز کی ہیں،یہاں تو ڈاکٹرز نے نوازشریف کو دیکھا ہے ،خواجہ حارث نے کہا کہ یہاں کا ٹرینڈہے ہم ٹیسٹ کروا کے بیرون ملک بھیجتے ہیں ۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد