پاکستان سمیت کئی ممالک میں سال کا پہلا سورج گرہن کل ہو گا

    پاکستان سمیت کئی ممالک میں سال کا پہلا سورج گرہن کل ہو گا

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) ماہرین فلکیات کے مطابق کئی ممالک میں رواں سال کا پہلا سورج گرہن کل ہوگا جو کہ پاکستان میں بھی دیکھا جا سکے گا۔محکمہ موسمیات کے مطابق مختلف شہروں میں سورج گرہن کے اوقات الگ الگ ہوں گے، سورج گرہن صبح 8بج کر46منٹ پر شروع ہو گا۔ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ 11بج کر 40منٹ پر مکمل سورج گرہن ہوگا اور دوپہر 2بج کر34منٹ پر یہ ختم ہوگا۔ مکمل سورج گرہن کا دورانیہ ایک گھنٹہ 50 منٹ ہو گا۔ایک بجے سورج گرہن ختم ہونا شروع ہو گا۔بیشتر شہروں میں سورج گرہن سے دن کے وقت اندھیرا چھا جائے گا اور سورج کے گرد انگوٹھی کی شکل کا ہالہ بھی بنے گا۔پاکستان میں رواں برس کے دوران سورج گرہن دوسری مرتبہ14 دسمبر کو ہوگا۔سورج گرہن کے متعلق ماہرین فلکیات کا کہنا ہے کہ یہ اس وقت لگتا ہے کہ جب چاند سورج کو پوری طرح سے ڈھانپ لیتا ہے۔ اسی مناسبت سے اسے رنگ آف فائر بھی کہتے ہیں۔ماہرین فلکیات کا کہنا ہے کہ رنگ آف فائر کا نظارہ سکھر سے گوادر تک کیا جا سکے گا۔خیال رہے کہ رواں ماہ کے اوائل میں پاکستان سمیت دنیا کے مختلف ممالک میں چاند گرہن دیکھا گیا تھا۔ چاند گرہن کا آغاز پاکستانی وقت کے مطابق شب دس بجکر 46 منٹ پرآغاز ہوا تھا۔قلمی چاند گرہن کا عروج 12 بجکر 24 منٹ پہ ہوا جبکہ یہ دو بجکر چار منٹ پہ اختتام پذیر ہو گیا۔چاند گرہن کے متعلق ڈائریکٹر میٹ آفس خالد محمود کا کہنا ہے کہ اس کو آنکھوں سے دیکھنا مشکل ہو گا۔ڈائریکٹر میٹ آفس خالد محمود کے مطابق قلمی گرہن چاند کے چہرے پر صرف ایک تاریک سایہ پیدا کرتا ہے جس کی وجہ سے سورج کی روشنی کا صرف ایک حصہ چاند تک پہنچنے سے رکا ہوا ہوتا ہے۔

سورج گرہن

مزید :

صفحہ اول -