کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے سختی شروع، سمارٹ لاک ڈاؤن جاری رہیگا: عمرا ن خان

  کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے سختی شروع، سمارٹ لاک ڈاؤن جاری رہیگا: ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کورونا ایس اوپیز پر عمل درآمد کیلئے سختی شروع کردی گئی، مکمل لاک ڈاؤن کے حق میں نہیں تاہم سمارٹ لاک ڈاؤن جاری رہے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے تحریک انصاف کی کور کمیٹی کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔تحریک انصاف کی کور کمیٹی کے ا جلاس میں وفاقی وزرا، پارٹی کی سینئرقیادت شریک ہوئی۔لیگل ٹیم نے کور کمیٹی کو جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کیس کے فیصلے پر بریفنگ دی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس میں سپریم کورٹ کے فیصلے کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور اس حوالے سے حکومت کی آئندہ کی حکمت عملی بھی طے کی گئی۔ذرائع کے مطابق اہم قومی فیصلوں کے بارے میں کور کمیٹی کو اعتماد میں لیا گیا۔ بریفنگ کے بعد کور کمیٹی اجلاس میں فیصلے کے قانونی پہلوؤں کا جائزہ لیا گیا اور اس حوالے سے آئندہ کی حکمت عملی اور نظر ثانی اپیل دائر کرنے سمیت مختلف آپشنز کا جائزہ لیا گیا۔ قانونی ٹیم نے کو ر کمیٹی کو مختصر فیصلے اور ریفرنس کے دفاع میں اٹھائے گئے اقدامات سے آگاہ کیا۔کور کمیٹی نے اتحادیوں کے تحفظات اور دیگر معاملات پر بھی غور کیا اور اس حوالے سے مذاکراتی کمیٹی نے اتحادیوں سے رابطو ں بارے آگاہ کیا۔کور کمیٹی اجلاس میں ملکی معاشی اور سلامتی کی صورتحال پر بحث کی گئی۔علاوہ ازیں ملک کے نامور لکھاریوں سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کے دوران وزیر اعظم نے قومی تہذیب و تمدن اور پاکستانیت کو اجاگر کرنے کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ماڈرن ذرائع ابلاغ، انٹرنیٹ پرہر قسم کے مواد خصوصاً قابل اعتراض کی آسان دستیابی اور مغربی طور طریقوں اور بیرونی کلچر کی یلغار سے ہماری اقدار اور نوجوان نسل کی تعلیم و تربیت کو شدید چیلنجز درپیش ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسلامی شعار اور قومی اقدارسے متضاد کلچر کی بھرمارسے جہاں ہماری تاریخ، ثقافت، معاشرتی اقدار کو شدید خطرات لاحق ہیں وہاں نئی نسل میں اسلامی شخصیات، آباؤ اجداد اور قومی تاریخ کے بارے میں معلومات بھی برائے نام اور محدود ہوتی جا رہی ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ نئی نسل کو قومی تشخص سے روشناس کرانے، معاشرتی اقدار اور پاکستانیت کے فروغ کیلئے ضروری ہے کہ اس حوالے سے فوری طور پر اقدامات اٹھائے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے نامور لکھاری جن کی تحریریں معاشرے کے ہر طبقے میں یکساں طور پر مقبول ہیں اس ضمن میں کلیدی کردار ادا کر سکتے ہیں۔وزیر اعظم نے کہا کہ قومی تہذیب و تمدن اور پاکستانیت کے فروغ کے حوالے سے کوششوں کی حکومتی سطح پر بھرپور پذیرائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان ٹیلی ویژن کی اصلاح پر خصوصی توجہ دے رہی ہے تاکہ پی ٹی وی قومی تشخص اجاگر کرنے میں اپنا کردار ماضی کی طرح ادا کر سکے۔ وزیرِ اعظم نے کہا وہ امید کرتے ہیں کہ نجی چینلز بھی اس ضمن میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے۔وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز اور معاون خصوصی برائے اطلاعات لیفٹنٹ جنرل(ر) عاصم سلیم باجوہ بھی اجلاس میں شریک تھے۔وزیراعظم نے ملک کے دانشوروں اور لکھاریوں پر زور دیا ہے کہ وہ پاکستانیت اور پاکستانی ثقافت کے فروغ کیلئے کردارادا کریں۔وزیراعظم سے ملک کے نامورلکھاریوں اور دانشوروں نے ویڈیولنک کے ذریعے ملاقات کی، جس میں وزیراظلاعات شبلی فراز اورمعاون خصوصی اطلاعات لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم نے بھی شرکت کی۔اپنے ویڈیو لنک خطاب میں وزیراعظم عمران خان نے قومی تہذیب وتمدن اورپاکستانیت کواجاگرکرنیکی اہمیت پرزوردیا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بیرونی کلچرکی یلغارسے نوجوان نسل کی تعلیم وتربیت کوشدیدچیلنجزدرپیش ہیں۔ پاکستانیت کے فروغ کیلئے ضروری ہے کہ اقدامات اٹھائے جائیں۔

وزیراعظم

مزید :

صفحہ اول -