سوشل میڈیا کا زیادہ استعمال ڈپریشن،گھبراہٹ میں مبتلا کرنے کا سبب

سوشل میڈیا کا زیادہ استعمال ڈپریشن،گھبراہٹ میں مبتلا کرنے کا سبب

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)سماجی رابطوں کیلئے استعمال کیا جانیوالا سوشل میڈیا کا زیادہ استعمال آپکو ڈپریشن اور گھبراہٹ کے مسائل سے دو چار کرسکتا ہے۔سوشل میڈیا کو ہم رابطوں کیلئے استعمال کرتے ہیں مگر اس کا زیادہ استعمال آپکی ذہنی صحت کو بھی متاثر کرسکتا ہے۔اس بات سے برطانیہ کی رائل سوسائٹی آف پبلک ہیلتھ گزشتہ چند سالوں سے مختلف تحقیقاتی رپورٹس کے ذریعے عوام کو خبردار کررہی ہے۔دی اکانومسٹ میں شائع 2017 ء کے سروے کے مطابق برطانیہ میں 14 سے 24 سال کے ایک چوتھائی نوجوانوں نے کسی نا کسی وقت ذہنی مسائل کا سامنا کیا ہے جس کے پیچھے سوشل میڈیا کا زیادہ استعمال ہونا ثابت ہوا ہے۔تحقیق میں شامل نوجوانوں کے مطابق حالانکہ سماجی رابطوں کی ویب سائٹس انہیں اظہار خیال کا بھرپور موقع دیتی ہیں لیکن ان کے زیادہ استعمال سے نوجوانوں نے ڈپریشن اور گھبراہٹ جیسے مسائل کا سامنا کیا ہے۔اس کے علاوہ نیند کی کمی، آن لائن بْلیئنگ، جسما نی ساخت کے بارے میں پریشانی اور کچھ کھو دینے کا ڈر جیسے مسائل کا بھی مستقل سامنا کرتے ہیں۔2014ء میں نیورو سائنٹسٹ کے تجربے میں بھی یہ ثابت ہوا کہ فیس بک انسا نی ذہن کے ان حصوں کو متحرک کرتا ہے جو جوئے یا منشیات کے ستعمال پر متحرک ہوتے ہیں۔موبائل ایپلی کیشن موومنٹ کے اعداد و شمار بھی اسی مسائل کی طرف اشارہ کرتے ہیں، 10 لاکھ صارفین سے کیے گئے سروے کے مطابق انسٹاگرام پر روزانہ کم از کم ایک گھنٹہ گزارنے والے 63 فیصدافراد نے ناخوش ہونے کابتایا۔اسی طرح اگر فیس بک کی بات کی جائے تو فیس بک استعمال کرنیوالوں میں ناخوش ہونے کی شرح 59 فیصد تھی۔

سوشل میڈیا

مزید :

صفحہ آخر -