این اے 184پی پی 276، ماہڑہ شہر، روہیلا نوالی سمیت متعدد علاقوں کیلئے تبدیلی نقصان دہ؟

  این اے 184پی پی 276، ماہڑہ شہر، روہیلا نوالی سمیت متعدد علاقوں کیلئے تبدیلی ...

  

ماہڑہ شہر (نمائندہ پاکستان) حلقہ این اے 184 پی پی 276 مسائل کی دلدل میں پھنس گئے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 184 پی پی 276 کے بڑے علاقے, ماہڑہ شہر, روہیلانوالی و دیگردیہاتوں کے لوگ بنیادی سہولیات سے محروم ہیں مین شاہراہ مظفرگڑھ تاعلی پور (قاتل روڈ)، رابطہ سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے، بارش اور گٹروں کا گندا پانی جمع ہونے سے سڑکیں جوہڑ بن جاتی ہیں ہسپتالوں میں کتے اور سانپ کاٹنے(بقیہ نمبر41صفحہ7پر)

کی ویکسین تک میسر نہیں، آپریشن تھیٹر میں ڈاکٹرز و عملہ کی کمی، سرکاری ہسپتالوں میں سہولیات ناپائید ہیں، ہسپتالوں کی اپ گریڈیشن کا کام شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکا، ماہڑہ شہر و دیگر علاقوں میں بوائز و گرلز ہائر سکینڈری سکولز اور کالجز کا اب تک قیام عمل میں نہیں لایا گیا طلباء و طالبات والدین سے دور رہ کر بیس سے چالیس کلومیٹر دور مظفرگڑھ کالجز میں تعلیم حاصل کرنے پر مجبور حلقے کے بیشتر مواضعات اور درجنوں بستیاں بجلی اور گیس جیسی بنیادی ضروریات سے محروم ہیں اور ماہڑہ شہر اور روہیلانوالی کے قبرستانوں کی چار دیواری نہ ہونے کی وجہ سے قبروں کا تقدس پامال، آوارہ کتوں اور جانوروں کی گزر گاہیں، حلقے میں بچوں اور فیملیز کے لیے حد پارک تک میسر نہیں گراؤنڈز کی کمی اور گراؤنڈز کی ازسر نو تعمیر حلقے کا بہت بڑا مسئلہ ھے حلقے کی سات لاکھ آبادی مسائل کی دلدل میں پھنس چکی ہے اس حوالے سے شہریوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا جن میں، میاں عبدالرشید زرگر, ملک محمد اجمل آرائیں, ملک سلیم ہاشمی زرگر, ملک شوکت حسین زرگر, محمد اسماعیل دھمرایا, محمد اکرم شاہین, محمد ظفر قریشی, سید عمران سلیم شاہ, چوہدری عثمان, چوہدری احمد، سیٹھ ریاض احمد, سعید ظفر کحھچی و دیگر شامل ہیں نے کہا کہ عوام مہنگائی، بے روزگاری،تعلیم، صحت، نکاسی آب جیسے سنگین مسائل سے دوچار ہے جبکہ حلقے کے منتخب نمائندے الیکشن میں جو وعدے کر کے گئے تھے ان کی تکمیل آج تک ممکن نہ ہو سکی ہمارا علاقہ پہلے سے زیادہ پسماندگی کی طرف گامزن ہے حلقے میں کوئی میگا پروجیکٹ، ترقیاتی کام نہیں ہولہذا وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار مسائل حل کرنے پرتوجہ دیں۔ف

مزید :

ملتان صفحہ آخر -