اتحادی پارٹیاں ناراض، حکومت کمزور وکٹ پر آگئی، لیاقت بلوچ

      اتحادی پارٹیاں ناراض، حکومت کمزور وکٹ پر آگئی، لیاقت بلوچ

  

ملتان(سٹی رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ سیاسی پارلیمانی اور اقتصادی بحران شدت اختیار کر گیاہے۔ وزیراعظم عمران خان کو وزارت عظمیٰ کی منزل تک پہنچا دیا گیا اب انہیں کسی بھی سیاسی، اقتصادی، سماجی، تہذیبی محاذ کی فکر نہیں۔ حکومتی شیرازہ بکھر رہاہے۔ بی این پی کے رہنما سردار اختر مینگل نے قومی اسمبلی میں ہی حکومتی اتحاد سے(بقیہ نمبر25صفحہ6پر)

علیحدگی کا اعلان کردیاہے۔ حکومت کی دیگر اتحادی پارٹیاں پہلے ہی نالاں ہیں۔ حکومت بہت ہی کمزور وکٹ پر ہے اور اس کی ملکی معاملات پر کوئی رٹ نہیں۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ ملکی معاملات، ریاستی امور پر وزیراعظم عمران خان کا غرور، توہین آمیز اور لاابالی طرز حکمرانی پر تباہی لارہاہے۔ان رویوں کے ساتھ سیاست، جمہوریت اور پارلیمانی نظام کے لیے خطرات بڑھ گئے ہیں۔ اقتصادی بحران خوفناک ہے۔ تنہا حکومت بحرانوں سے عہدہ براء نہیں ہوسکتی۔ اب وزیراعظم عمران خان کے پاس دوہی آپشن ہیں، سیاسی، پارلیمانی، آئینی اور اقتصادی بحرانوں سے نجات اور مقبوضہ کشمیر پر بھارتی جارحانہ اقدامات کے سدباب کے لیے قومی قیادت، ریاست کے ساتھ مل کر قومی متفقہ قومی ایکشن پلان بنایا جائے اگر یہ راستہ اختیار نہیں کیا جاتا تو حکومت سیاسی، اقتصادی، احتساب اور کرونا سے نمٹنے کی ناکامیوں کو تسلیم کرے، استعفیٰ دے۔ ملک میں نئے عوامی مینڈیٹ کے لیے قبل از وقت انتخابات کے سوا کوئی چارہ نہ ہوگا۔

لیاقت بلوچ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -