مہنگائی میں 9.89فیصد اضافہ،22اشیاء کی قیمتیں آؤٹ آف کنٹرول

  مہنگائی میں 9.89فیصد اضافہ،22اشیاء کی قیمتیں آؤٹ آف کنٹرول

  

ملتان (نیوز رپورٹر) ادارہ شماریات پاکستان نے مہنگائی کی ہفتہ وار رپورٹ جاری کردی ہے جس کے مطابق18جون2020ء کواختتام پذیر ہونے والے ہفتہ کے دوران مہنگائی کی شرح 9.89فیصدجبکہ گزشتہ ہفتہ کے مقابلہ میں یہ شرح 1.02فیصدزیادہ رہی (بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

ہے۔ ملک کے 17بڑے شہروں سے 51اشیاء کی قیمتوں کاتقابلی جائزہ لیاگیا جس میں سے22اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ7اشیاء کی قیمتوں میں کمی جبکہ 22اشیاء کی قیمتوں میں استحکام رہا ہے۔اس ہفتہ کے دوران ملک میں سرخ مرچ (پسی ہوئی)،ٹماٹر، آٹا،انڈہ(فارمی)، ا?لو، لان(کپڑا)،موٹالٹھا،چکن(زندہ)،جارجٹ،چائیکاکپ،چاول اری6/9،پیاز،چاول باسمتی(ٹوٹا)،دودھ(تازہ)،خوردنی تیل، ایل پی جی(سلنڈر)،خشک دودھ،بیف،گڑ،دہی اور مٹن کی قیمتوں میں اضا فہ دال ماش، کیلا،لہسن،دال چنا،چینی،دال مونگ،دال مسورکی قیمتوں میں کمی جبکہ ماچس،نمک، سگریٹ،گھی(کھلا)، کوکنگ آئل،ویجیٹیبل گھی، آگ جلانے والی لکڑی، انرجی سیور، بیف پلیٹ، ھائی سپیڈ ڈیزل، پیٹرول، واشنگ سوپ،ڈبل روٹی، صابن،دال پلیٹ،الیکٹرک چارجز، چائے، گندم، مٹی کا تیل،سینڈل،چپل،گیس چارجز،لوکل کال کی قیمتوں میں استحکام رہا ہے۔

کنٹرول

مزید :

ملتان صفحہ آخر -